Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193767
Published : 15/5/2018 17:12

ماہ شعبان کے آخری دنوں کے لئے اہل بیت(ع) کی تأکید

اے ابا صلت یہ دعا کثرت کے ساتھ پڑھو:خدایا! اگر تونے مجھے ماہ شعبان کے گذرے ہوئے دنوں میں معاف نہ کیا ہو تو مجھے اس کے باقی ماندہ دنوں میں معاف کردے۔چونکہ اللہ تعالٰی اس مہینہ میں بہت سے لوگوں کو آنے والے مہینہ(رمضان) کی حرمت کے طفیل میں جہنم کی آگ سے رہائی عطا کردیتا ہے۔

ولایت پورٹل: قارئین کرام! آج شعبان المعظم کی ۲۸ تاریخ ہے آئیے اس با فضیلت مہینہ کی کچھ فضیلتوں کو اپنے دامن میں سمیٹنے کی کوشش کریں چنانچہ حضرت امام سجاد علیہ السلام ارشاد فرماتے ہیں:’’ جو شخص اس مہینہ(شعبان المعظم) میں محبت اہل بیت اطہار(ع) کے ساتھ اللہ کی خاطر روزہ رکھے اللہ اسے قیامت کے دن اپنے خاص کرم سے نوازے گا اور بہشت کو اس پر واجب کردے گا۔ ہاں ! لوگوں یہ وہی مہینہ ہے جس کے لئے اللہ کے رسول(ص) نے فرمایا ہے کہ شعبان میرا مہینہ ہے لہذا اس مہینہ میں زیادہ سے زیادہ استغفار کرو اور محمد و آل محمد(ص) پر صلوات و درود بھیجو‘‘۔
ہم آہستہ آہستہ ماہ شعبان معظم سے جدا ہورہے ہیں یہ ایسا مہینہ تھا جس میں ہم بہت کچھ کرسکتے تھے تاکہ خود کو رمضان المبارک میں اللہ تعالیٰ کی ضیافت کے لئے تیار کرسکیں۔ لیکن اب اس مہینہ کے کچھ ہی دن باقی رہ گئے ہیں چنانچہ جناب ابو صلت ہروی امام رضا علیہ السلام سے روایت کرتے ہیں کہ ماہ شعبان کی آخری دنوں میں جمعہ کا دن تھا۔ میں حضرت کی خدمت میں مشرف ہوا تو آپ نے فرمایا: اے ابا صلت ماہ شعبان کا اکثر حصہ گذر چکا ہے اور یہ اس کا آخری جمعہ ہے لہذا تم سے اس مہینہ کے حق میں جتنی کوتاہیاں سرزد ہوئی ہیں تم ان سب کی تلافی  کرسکتے ہو۔
بس تم آج ہر وہ کام کرسکتے ہو جو دنیا و آخرت میں تمہارے لئے مفید ہوسکتا ہے۔ لہذا تم آج زیادہ سے زیادہ دعا کرو،زیادہ سے زیادہ قرآن مجید تلاوت کرو،اپنے گناہوں پر اللہ تعالٰی کی بارگاہ میں استغفار کرو چونکہ جب تم ماہ رمضان میں داخل ہونا تو تم خالص اور پاک ہوکر اس کی بارگاہ میں حاضر ہونا ۔
تمہاری گردن پر کسی امانت کا بوجھ نہ رہے مگر یہ کہ تم نے اسے ادا کردیا ہو،اور اگر تمہارے دل میں تمہارے کسی مؤمن بھائی کے لئے کوئی کینہ ہو تو تم اسے دھو ڈالو۔تقوائے الہی اختیار کرو،اپنے تمام ظاہر اور باطن امور میں اس پر توکل کرو چونکہ جو اللہ پر توکل کرتا ہے اللہ ہی اس کا کفیل بن جاتا ہے۔
اور کثرت کے ساتھ یہ دعا پڑھو:’’اللّهُمَّ اِنْ لَمْ تَکُنْ غَفَرْتَ لَنا فیما مَضى مِنْ شَعْبانَ فَاغْفِرْ لَنا فیما بَقِىَ مِنْهُ‘‘۔
خدایا! اگر تونے مجھے ماہ شعبان کے گذرے ہوئے دنوں میں معاف نہ کیا ہو تو مجھے اس کے باقی ماندہ دنوں میں معاف کردے۔
چونکہ  اللہ تعالٰی اس مہینہ میں بہت سے لوگوں کو  آنے والے مہینہ(رمضان) کی حرمت کے طفیل میں جہنم کی آگ سے رہائی عطا کردیتا ہے۔(منبع: عیون اخبار الرضا، ج2، ص 51)۔

 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22