Friday - 2018 August 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193805
Published : 17/5/2018 10:21

رمضان روح انسانی کے عروج اور قرب خدا حاصل کرنے کا مہینہ

روح و نفس انسانی کو کہ جس کے باطن میں عروج و ارتقاء کا رجحان ہوتا ہے، عروج و بلندی اور ارتقاء کی جانب مہمیز کرے تاکہ خدا سے قربت حاصل کر اپنے اخلاق کو الٰہی اخلاق سے آراستہ اور مزین کرے اور اس کام کے لئے رمضان کا مہینہ بہترین موقع اور فرصت ہے۔

ولایت پورٹل: رمضان کی بابت ایک بنیادی مسئلہ یہ ہے کہ انسان جو کہ مختلف اسباب و عوامل کی بناپر خدا اور اس کی راہ سے غافل ہونے کی بناپر ہر طرف سے گھر چکا ہے اور متعدد محرکات و جذبات نے اسے تعطّل ، تنزّل اور سقوط کا شکار بنادیا ہے، اس کو کسی موقع کی ضرورت ہے کہ جس سے فائدہ اٹھا کر روح و نفس انسانی کو کہ جس کے باطن میں عروج و ارتقاء کا رجحان ہوتا ہے، عروج و بلندی اور ارتقاء کی جانب مہمیز کرے تاکہ خدا سے قربت حاصل کر اپنے اخلاق کو الٰہی اخلاق سے آراستہ اور مزین کرے اور اس کام کے لئے رمضان کا مہینہ بہترین موقع اور فرصت ہے۔
البتہ رمضان کے علاوہ فرصت کے دیگر مواقع بھی فراہم ہیں۔ مثال کے طور پر انہی پانچ وقت کی یومیہ نمازوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے عروج کی منزل حاصل کرتے ہوئے خود کی اصلاح کرسکتے ہیں اور معنوی بیماریوں، غفلتوں، بوسیدگیوں اور زنگ کو مٹانے میں کامیابی حاصل کرسکتے ہیں، نماز، اس کام کیلئے بہت ہی اچھا موقع ہے۔ اگر آپ نے اب تک آزمایا نہیں ہے کہ ضرور آزمایا ہوگا اور انشاء اللہ آپ کا دائمی عمل بھی ایسا ہو کہ اس کو آزمائیں، آپ توجہ دیں کہ اگر نماز کی حالت میں، اپنی اور اپنے ذریعہ انجام دیئے گئے امور کی طرف توجہ دیں تو یقینی طور سے آپ اپنے کو نماز کے بعد، نماز سے پہلے کی حالت سے الگ حالت اور کیفیت میں قرار پائیں گے۔ بس اس کی شرط یہی ہے کہ حالت نماز میں توجہ کریں کہ آپ کس کام میں سرگرم ہیں،بہتر یہ ہوگا کہ آپ نماز کے اذکار کو سمجھیں اور یہ بہت ہی آسان کام ہے۔ہمیںیہ نہیں کہنا چاہییٔ کہ ہماری زبان فارسی ہے ، ہمیں عربی کی عبارتیں سمجھ میں نہیں آتی ہیں۔ شروع سے لے کرآخر تک وہ تمام عبارتیں جو نماز میں پڑھی جاتی ہیں ایک متوسط آدمی کے لئے ان کے سمجھنے میں ایک گھنٹہ کا بھی وقت نہیں لگے گا، یہ بہت ہی آسان کام ہے، ایسی بہت سی کتابیں بھی لکھی گئی ہیں جن میں ترجمہ کیا گیا ہے اگر آپ ان کے معنی و مفہوم پر توجہ دیں اور یہ سمجھ جائیں کہ ان جملوں کا مفہوم کیا ہے اور ان پر غور کریں تو اچھا ہے، البتہ اچھا تو ہے لیکن اگر اتنا بھی نہ ہوسکا تو کم از کم جب آپ سجدے کی حالت میں ہوں تو جان لیں کہ آپ خدا سے ہم کلام ہیں، جب حالت رکوع میں ہوں تو جان لیں کہ رب العالمین کی تعظیم بجالارہے ہیں اور جب قرائت و ذکر کی حالت میں ہوں تو جان لیں کہ کس سے گفتگو کررہے ہیں، بس یہی توجہ بہت اہمیت رکھتی ہے۔

 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 August 17