Friday - 2018 August 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193807
Published : 17/5/2018 11:6

اسلام کے علاوہ دیگر ادیان میں روزہ کا تصور

سورہ بقرہ کی اس آیت 183 سے صاف ظاہر ہے کہ دوسری قوموں پر بھی روزہ واجب تھا، البتہ اس کی کیفیت اور کمیت مختلف تھی، لیکن سب کا مقصد مشترک ہے یعنی تہذیب نفس، تطہیر باطن، فروغ معنویت، جسم و روح کی تربیت وغیرہ ۔ ادیان الہی میں روزہ کی تاریخ بہت پرانی ہے یعنی جب سے آدم و حوا زمین پر تشریف لائے ہیں تب سے روزہ کی کوئی نہ کوئی شکل ادیان الہی میں موجود رہی ہے ۔

ولایت پورٹل: یَا أَیُّهَا الَّذِینَ آمَنُوا كُتِبَ عَلَیْكُمُ الصِّیَامُ كَمَا كُتِبَ عَلَی الَّذِینَ مِن قَبْلِكُمْ لَعَلَّكُمْ تَتَّقُونَ۔ سورہ بقرہ کی اس آیت 183 سے صاف ظاہر ہے کہ دوسری قوموں پر بھی روزہ واجب تھا، البتہ اس کی کیفیت اور کمیت مختلف تھی، لیکن سب کا مقصد مشترک ہے یعنی تہذیب نفس، تطہیر باطن، فروغ معنویت، جسم و روح کی تربیت وغیرہ ۔ ادیان الہی میں روزہ کی تاریخ بہت پرانی ہے یعنی جب سے آدم و حوا زمین پر تشریف لائے ہیں تب سے روزہ کی کوئی نہ کوئی شکل ادیان الہی میں موجود رہی ہے ۔ ادیان الہی میں روزہ کا وجوب انسان کے ایک فطری تقاضے کے تحت ہے کیونکہ انسان طالب کمال ہے وہ حیوانوں کی سطح میں نہیں گرنا چاہتا کہ پوری طرح سے حیوانی شہوات اور خواہشات کا اسیر ہو جائے لہذا روزہ کے ذریعہ اس پر باندھ لگانے کا خواہاں ہے تا کہ ان خواہشات کا اسیر نہیں بلکہ امیر بن کر انسانیت کے کمال مطلوب پر فائز ہو۔
یہودیت
یہودیوں میں تین طرح کا روزہ ہوتا ہے، واجب، تأکیدی اور اختیاری ، ان کے یہاں کھانے پینے سے پرہیز کے علاوہ قربانی کرنے سے بھی پرہیز کیا جاتا ہے نیز دعا، گناہوں کا اعتراف، استغفار اور توریت کی تلاوت وغیرہ میں ہی بسر کرنا ہوتا ہے، ان کے یہاں روزہ کی مدت ایک دن کے غروب سے دوسرے دن کے غروب تک رہتی ہے(یعنی چوبیس گھنٹہ) اور سال کے مختلف ایام میں ان کے یہاں روزہ واجب ہے اور بعض ایام میں واجب نہیں لیکن تأکید کی گئی ہے، اور باقی دنوں میں روزہ رکھنا اختیاری امر ہے ہے۔چنانچہ یوم کیپور (YOM KIPPUR)  کا روزہ، اہم ترین اور واجب ترین روزہ ہے جو طلب بخشش کے لئے رکھا جاتا ہے جو گناہوں کا کفارہ ہے۔ یہ روزہ عبری کے ساتویں مہینہ کی دسویں تاریخ کو رکھا جاتا ہے، جس کا حکم توریت کے سفر لاویان میں سورہ نمبر ۱۶ کی آیت نمبر ۲۹سے ۳۱ میں دیا گیا ہے۔
نیز اس کے علاوہ بہت سے ایام ایسے ہیں جن میں روزہ رکھنا واجب ہے اور بہت سے ایسے ہیں جن میں اختیاری اور تاکید ہے ۔
عیسائیت
حالانکہ انجیل میں کچھ آیتیں ہیں جن میں روزہ رکھنے کی تأکید کی گئی ہے لیکن کوئی بھی روزہ عیسائیت میں واجب نہیں ، بلکہ سارے روزے اختیاری ہیں جو تہذیب نفس، طلب بخشش، استجابت دعا، نذر و نیاز، عبادت اور قربت خدا کے لئے رکھے جاتے ہیں۔ عیسائیت میں روزہ کی شکل بھی کافی مختلف ہے، نیز عیسائیوں کے مختلف فرقوں میں بھی روزہ کی کیفیت آپس میں کافی الگ ہے ، بعض لوگ صرف گوشت سے پرہیز کر کے روزہ رکھتے ہیں، تو کچھ لوگ گوشت کے ساتھ دودھ اور انڈے سے بھی پرہیز کرتے ہیں، تو کچھ لوگ مکمل ہر طرح کی غذا سے پرہیز کرتے ہیں اور صرف پینے کی چیزوں پر رہتے ہیں، تو کچھ لوگ ہر طرح کے کھانے پینے سے پرہیز کرتے ہیں،  تو کچھ لوگ کسی بھی خاص غذا یا کسی بھی خاص چیز سے پرہیز کرکے اور اپنی خواہشات کو روک کر اور دوسری طرح کی ریاضت کرکے، یا دوسرے کاموں کو چھوڑ دعا و عبادات کو انجام دے کر روزہ رکھتے ہیں، ان تمام الگ الگ طرح کے روزوں کا مقصد مشترک ہے اور وہ نفسانی خواہشات پر لگام لگانا، تہذیب نفس، تطہیر باطن، بخشش گناہ، فقرا کے ساتھ ہمدردی وغیرہ ہے ۔  یوں تو عیسائیت میں کوئی روزہ واجب نہیں لیکن جن ایام میں روزہ رکھنے کی تاکید کی گئی ہے وہ یہ ہیں :
1. عید پاک سے پہلے جمعہ کا دن
2. مقدس هفته میں دوشنبه سے  پنجشنبه تک
3. عید پاک سے پہلے چالیس دن کا روزہ
4. هفته مقدس سے پہلے چالیس دن کا روزہ
5. هر هفته چهارشنبه کے دن کا روزہ یهودیوں کی چال بازیوں کے ذریعہ حضرت عیسی کی گرفتاری کی یاد میں
6۔ هر هفته جمعه کے دن کا روزہ حضرت عیسی کو صلیب ہونے کی یاد میں
7. ہر فصل کا روزہ
8. فرد کے گناہوں کے کفارہ کا روزہ
 9. اپنی نجی مناسبتوں کی بناپر اختیاری روزہ
جیسا کہ پہلے بھی کہا گیا ہے کہ روزہ کا حکم چونکہ انسان کے فطری تقاضے کے تحت ہے لہذا صرف اہل کتاب ادیان توحیدی و ابراہیمی میں ہی نہیں بلکہ دیگر اقوام میں بھی روزہ کا تصور پایا جاتا ہے مثال کے طور پر ہندوؤں میں SHIVRATRI، DURGA PUJA  اور SARASWATI PUJA  کی مناسبتوں میں روزه کا تصور پایا جاتا ہے . اسی طرح عورتوں میں KARVA CHAUTH  نام کا ایک خاص قسم کا روزه پایا جاتا ہے ۔
اسی طرح بدھ مذہب میں بھی ہر مہینہ کی چودہ اور دیگر مقدس ایام میں روزہ رکھا جاتا ہے جس میں جامد غذاؤں سے پرہیز اور صرف پینے کی چیزوں پر اکتفا کیا جاتا ہے ۔
جین مذہب میں بھی مقدس ایام میں روح کو پاک کرنے کے لئے روزہ رکھا جاتا ہے بلکہ ان کے یہاں پرہیزگاروں کے نزدیک بہترین موت وہ ہے جو  کھانا پینا مکمل چھوڑ کے اور دنیا کو تیاگ کے اختیاری طور سے موت آئے۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 August 17