Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193816
Published : 17/5/2018 13:41

کعبہ پر آل سعود صہیونیوں کی طرح ناحق قابض ہیں:تیونسی مبلغ شیخ بشیر

انہوں نے اپنے فالورس کے نام پیغام میں تحریر کیا ہے اے جوانو!اے مسلمانوں ہمارے دونوں قبلے جابروں کے چنگل میں اور ہمیں دونوں کو بچانے اور آزاد کرانے کی کوشش کرنی چاہیئے تاکہ کوئی فتنہ باقی نہ رہے اور ہر ظالم و سفاک اپنے کیفر کردار تک پہونچے ۔

ولایت پورٹل: تیونس کے مشہور اہل سنت مبلغ شیخ  بشیر بن حسن نے اپنے فیس بوک اکاونٹ پر حجاز پر حکمراں خاندان آل سعود کے تئیں شدید نکتہ چینی کی اور خاص طور پر سعودی کے جوان شہزادے بن سلمان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جو مسلمان اب تک یہ نہیں جانتا کہ آل سعود بھی صہیونیوں کی طرح غاصب ہیں وہ نادان ہے اور اسے دھوکہ دیا جارہا ہے۔
جس طرح صہیونیوں کا قبلہ اول مسجد الاقصٰی پر ناحق اور غاصبانہ قبضہ ہے اسی طرح آل سعود نے بھی مسلمانوں کے موجودہ قبلہ(خانہ کعبہ) پر آل سعود کا قبضہ ہے۔ یہ جس کو چاہتے ہیں کعبہ میں آنے کی اجازت دیتے ہیں اور جسے چاہتے ہیں منع کردیتے ہیں ۔جیسا کہ کئی برس پہلے شام کے لوگوں پر حج کو جانے پر پابندی تھی اور تقریباً ۴ برس ہوئے شام کے لوگ بیت اللہ کی زیارت کو نہیں جاتے اور اسی طرح ۳ برس سے یمن اور دوسرے کچھ اسلامی ممالک کے لوگوں پر پابندی لگا رکھی ہے۔
تیونس کے اس نامور مبلغ نے تحریر کیا: کہ آل سعود کس حق سے لوگوں کو اللہ کے گھر میں جانے کی اجازت دیتے ہیں جبکہ اللہ تعالٰی نے ہر مسلمان کے لئے اپنے گھر کی زیارت مجاز قرار دے رکھی ہے۔
انہوں نے اپنے فالورس کے نام پیغام میں تحریر کیا ہے اے جوانو!اے مسلمانوں ہمارے دونوں قبلے جابروں کے چنگل میں اور ہمیں دونوں کو بچانے اور آزاد کرانے کی کوشش کرنی چاہیئے تاکہ کوئی فتنہ باقی نہ رہے اور ہر ظالم و سفاک اپنے کیفر کردار تک پہونچے ۔
نیز شیخ بشیر نے گذشتہ چند برسوں میں سعودی عرب کے مفتیوں کی طرف سے دیئے جانے والے متنازعہ فتوؤں کی حقیقت کو بھی کھولتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فتوئے در اصل دشمن کو خوش کرنے کے لئے دیئے ہیں اور ان کا اسلام سے دور دور تک کا بھی کوئی واسطہ نہیں ہے۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22