Friday - 2018 August 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193953
Published : 26/5/2018 11:4

امریکہ میں دو مسلمان قیدیوں کو افطار میں کھلایا جاتا رہا سور کا گوست

شہری حقوق کے لئے کام کرنے والی اس تنظیم نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ جیل انچارج کو جب یہ معلوم تھا کہ یہ دونوں قیدی مسلمان ہیں تو پھروہ انہیں بھوک کے وقت افطار میں ہر دن سور کا گوشت کیوں کھلاتا رہا۔

ولایت پورٹل:انڈیپینڈٹ ویب سائٹ(independent) کی رپورٹ کے مطابق امریکہ کی سب سے بڑی ریاست الاسکا’’ Alaska ‘‘ میں ایک شہری حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیم نے عدالت میں یہ دعویٰ پیش کیا ہے کہ جیل کے انچارج نے منع کرنے کے باوجود بھی دو مسلمان قیدیوں کو افطار میں سور کا گوشت کھلایا ہے۔
اطلاعات کے مطابق اس تنظیم نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ جیل انچارج کو جب یہ معلوم تھا کہ یہ دونوں قیدی مسلمان ہیں تو پھروہ  انہیں بھوک کے وقت افطار میں ہر دن سور کا گوشت کیوں کھلاتا رہا۔
یاد رہے کہ امریکہ میں سور کے گوشت کا استمعال عام بات ہے اور سرکاری اداروں میں بھی اسے کھانے کا چلن عام ہے لہذا جیل وغیرہ میں سور کا گوشت دیا جانا شاید اتنی بڑی بات نہ ہو لیکن اسلامی قانون کے مطابق ایک مسلمان پر سور کا گوشت حرام ہے۔مغربی ممالک میں مسلمانوں کے ساتھ یہ دوھرا برتاؤ اسلام فوبیا کا ایک حصہ ہیں۔

 شفقنا


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 August 17