Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193982
Published : 27/5/2018 14:41

اسرائیل بنی برطانوی ہتھیاروں کی ۸ویں سب سے بڑی منڈی

یاد رہے کہ پچھلے پانچ سالوں میں اسرائیل،برطانیہ سے ۳۵۰ ملین پونڈ کی ہتھیار ڈیل کرچکا ہے جن میں مختلف جنگی آلات وابزار شامل ہیں اور اس تازہ رپورٹ نے اسرائیل کو برطانیہ کی ۸ ویں سب سے بڑی ہتھیار سپلائی منڈی میں تبدیل کردیا ہے۔

ولایت پورٹل: گارڈین کی رپورٹ کے مطابق عزہ میں چند دن پہلے ہونے والی اسرائیلی دراندازی کے بعد برطانیہ کے شہزادے’’پرنس ویلیم‘‘ کا بیت المقدس اور رام اللہ جانے کے عزم کا اظہار کرنا تھا کہ  برطانیہ کی وہ ہتھیار کمپنیاں جو اسرائیل کو ہتھیار فروخت کرتی ہیں ان کے اعداد و ارقام  اس طرح سامنے آئے کہ اسرائیل کو برطانیہ کے ہتھیاروں کی ایک بڑی اور اہم منڈی شمار کیا جانے لگا۔
بات پچھلے سال کی ہے جب برطانیہ نے اسرائیل کو ۲۲۱ ملین پونڈ کے ہتھیار فروخت کرنے کی اجازت کمپنی سے حاصل کی تھی۔
موجودہ اعداد و ارقام کے تناظر میں ۲۰۱۶ میں اسرائیل نے برطانیہ سے تقریباً ۸۶ ملین پونڈ کے ہتھیار خریدے جبکہ ۲۰۱۵ میں یہ خریداری صرف ۲۰ ملین پونڈ تک ہی محدود تھی۔
یاد رہے کہ پچھلے پانچ سالوں میں اسرائیل،برطانیہ سے ۳۵۰ ملین پونڈ کی ہتھیار ڈیل کرچکا ہے جن میں مختلف جنگی آلات وابزار شامل ہیں اور اس تازہ رپورٹ نے اسرائیل کو برطانیہ کی ۸ ویں سب سے بڑی ہتھیار سپلائی منڈی میں تبدیل کردیا ہے۔
یاد رہے کہ برطانیہ آج تک مسلمانوں کی پیٹھ میں خنجر گھونپتا آیا ہے اور وہ اسرائیل جیسے سفاک کے ہاتھوں سالانہ اربوں روپیوں کے ہتھیار فروخت کر مسلمانوں کے قتل عام میں سب سے بڑا شریک و سہیم ہے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24