Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 194039
Published : 30/5/2018 12:34

امام حسن(ع) کا حلم و بردباری

امام حسن(ع) اپنے حلم ،بلند آداب اور عظیم اخلاق میں ایک نمونہ تھے اور اسی صفت کی وجہ سے لوگوں کے دلوں بلکہ یہاں تک کہ دشمن بھی آپ کا حد درجہ احترام کرتے تھے۔

ولایت پورٹل: حضرت امام حسن علیہ السلام ایسے حلیم و بردبار تھے کہ جو بھی آپ کے ساتھ بے ادبی کرتا آپ اس کے ساتھ احسان کرتے تھے مورخین نے آپ کے حلم کے متعلق متعدد واقعات قلمبند کئے ہیں، ایک واقعہ یہ ہے کہ آپ نے جب اپنی بکری کا ایک پیر ٹوٹا ہوا دیکھا تو اپنے غلام سے فرمایا:
یہ کس نے کیا ہے ؟
غلام :میں نے ۔
امام :تونے ایساکیوں کیا؟
غلام :تاکہ آپ اس کی وجہ سے ناراض ہو جائیں!
امام نے مسکراتے ہوئے فرمایا:’’میں تجھے ضرور خوش کروں گا۔
امام نے اس پربہت زیادہ بخشش کرکے اسے آزاد کردیا ۔
آپ کے سخت دشمن مروان بن حکم نے آپ کے عظیم حلم کا اعتراف کیا ہے اور جب آپ کا جسم اطہر حظیرۂ قدس میں لیجایا گیا تو اس نے آپ کے جنازہ کو کا ندھا دینے میں سبقت کی امام حسین(ع) یہ دیکھ کرمتعجب ہوئے اور اس سے فرمایا:
آج تم اس کا جنازہ اٹھانے کے لئے آگئے جس پر تم کل غیظ و غضب کا گھونٹ پیتے تھے ؟۔
مروان نے کہا :جس کا حلم پہاڑ کے مانند ہو میں اس کے ساتھ ایسا ہی کروں گا۔امام حسن(ع) اپنے حلم ،بلند آداب اور عظیم اخلاق میں ایک نمونہ تھے اور اسی صفت کی وجہ سے لوگوں کے دلوں بلکہ یہاں تک کہ دشمن بھی آپ کا حد درجہ احترام کرتے تھے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12