Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 194352
Published : 28/6/2018 18:29

نیکی ہیلی کا دہلی دورہ؛ایران سے خریدے جانے والے تیل میں کٹوتی کا مطالبہ

اقوام متحدہ میں امریکی مندوب نے ہندوستان کے ذریعہ ایران سے خریدے جانے والے کچے تیل میں کٹوتی کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے جبکہ ہندوستان نے دو ٹوک انداز میں کہا کہ ہم امریکہ کے ذریعہ لگائی گئی پابندی کو تسلیم نہیں کرتے صرف اقوام متحدہ کی جانب سے عائد کی گئیں پابندیوں پر عمل ہم عمل کرتے رہیں گے۔

ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں امریکہ کی مندوب نیکی ہیلی آج کل دہلی کے سرکاری دورے پر ہیں جہاں انہوں نے ہندوستانی رہنماؤں سے دوجانبہ تعلقات میں فروغ پر ان سے بات چیت کی۔
نیکی ہیلی نے جہاں ہندوستان سے امریکہ کے قدیمی تعلقات کی دہائی دی وہیں حکومت ہند کو یہ باور کرانے کی کوشش بھی کی کہ ایران کا ایٹمی سستم دنیا بھر کے لئے خطرہ ہے اسی وجہ سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس معاہدہ میں بنے رہنے کو بہتر نہیں سمجھا۔
یاد رہے کہ نیکی ہیلی اقوام متحدہ کے ایوان میں بھی اپنی چرب زبانی کے لئے مشہور ہیں اور ساتھ ہی ایک امریکی عہدیدار ہونے کے سبب جھوٹ بولنے میں بھی مہارت رکھتی ہیں۔جبکہ ایران اپنی برقی اور ادویہ جاتی توانائی کے لئے اقوام متحدہ کے قانونی دائرہ میں ایٹمی ڈیل کا پابند ہے تاہم نیکی ہیلی نے یہ تو نہ بتایا کہ امریکی حکومت کسی بھی معاہدہ کی پابند نہیں ہے بلکہ الٹا ایران فوبیا پھیلا کر ہندوستان جیسے عظیم ملک کو خوفزدہ کرنا چاہتی ہے۔
اقوام متحدہ میں امریکی مندوب نے  ہندوستان کے ذریعہ ایران سے خریدے جانے والے کچے تیل میں کٹوتی کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے جبکہ ہندوستان نے دو ٹوک انداز میں کہا کہ ہم امریکہ کے ذریعہ لگائی گئی پابندی کو تسلیم نہیں کرتے  صرف اقوام متحدہ کی جانب سے عائد کی گئیں پابندیوں پر عمل ہم عمل کرتے رہیں گے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21