Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 194440
Published : 7/7/2018 17:28

مکروہ یہودی سیاست کی شہکار’’صدی کی ڈیل‘‘ بے نقاب،سعودی ولیعہد کریں گے اسرائیلی پارلیمنٹ کو خطاب

فلسطینی اتھارٹی کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اب ہمارے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کر رہا ہے۔ ہمارے مسلمان ممالک نے صرف اپنے اقتدار اور بادشاہت کی خاطر اسرائیل کے ساتھ ہاتھ ملا لیا ہے۔

ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق سعودی ولی عہد اسرائیلی پارلیمنٹ سے خطاب کرینگے،اس خبر نے مسلم دنیا میں ہلچل مچا دی۔ تفصیلات کے مطابق اسرائیل کی پارلیمان کے رکن یوسف یونا نے باضابطہ طور پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو مقبوضہ فلسطین کا دورہ کرنے کے بعد یہودی پارلیمنٹ سے خطاب کی دعوت دیکر مسلم دنیا میں ہلچل پیدا کر دی ہے۔ الجزیرہ کی رپورٹ کےمطابق اسرائیلی رکن پارلیمنٹ یوسف ویانا کا کہنا ہے کہ شہزادہ محمد بن سلمان کو اب کھل کر اور جرأت مندانہ طریقے سے سامنے آنا چاہئے تاکہ ابہام کو دور کیا جاسکے۔ انہوں نے اعتدال پسند عرب ممالک کو کہا ہے کہ امن مذاکرات کیلئے عرب امن منصوبے پر غور کریں۔ یہودی مبصرین کا کہنا ہے کہ ’’صدی ڈیل‘‘درحقیت ٹرمپ ڈیل ہے جس کو مصر سعودی عرب امارات اور اردن نے تسلیم کر لیا ہے۔ اسرائیل اخبار الیوم کے مطابق صدر ٹرمپ کے داماد جیرٹ کوشنر کی کوشش کا نتیجہ ہے کہ عرب ممالک اب اسرائیل کے ساتھ دوستی کا ہاتھ بڑھا رہے ہیں دوسری طرف صدی ڈیل کے منصوبے کو فلسطینیوں کے شدید ردعمل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اسرائیلی فوجی اب کھل کر فلسطینیوں کے خون سے ہولی کھیل رہے ہیں۔ صرف ایک ملک اردن ہے جس نے ان عرب ممالک کے سامنے گھٹنے نہیں ٹیکے جو اندرون خانہ اسرائیل کے وجود کو تسلیم کر چکے ہیں۔ فلسطینی اتھارٹی کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اب ہمارے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کر رہا ہے۔ ہمارے مسلمان ممالک نے صرف اپنے اقتدار اور بادشاہت کی خاطر اسرائیل کے ساتھ ہاتھ ملا لیا ہے۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21