Wed - 2018 july 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 194456
Published : 8/7/2018 17:57

قطر کو مغربی ممالک کی حمایت سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا:متحدہ عرب امارات

قرقاش نے قطر پر دہشتگردوں کی حمایت اور شدت پسندی کے فروغ دینے کا الزام لگایا ہے کہ:قطر کی موجودہ پالیسی سے اس ملک کے عوام کا بھلا نہیں ہوگا ،بیرونی ممالک سے مدد کی فریاد اور مظلوم نمائی کرنا اور اغیار پر بھروسہ کرنا قطری قوم کے شایان شان نہیں ہے۔
ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ کے مشیر انور قرقاش نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ پر کئی ٹوئیٹ کر قطر  کا مذاق بناتے ہوئے تحریر کیا ہے کہ: مغربی ممالک سے بڑے بڑے اقتصادی معاہدہ کرنا اور ہمارے خلاف بڑے بڑے بین الاقوامی اداروں میں شکایت کرنے سے ظاہر ہوتا ہے کہ قطر مکمل طور پر شکست کھا چکا ہے اور اس ملک کے عوام  اب یہ سمجھ چکے ہیں کہ اس ملک کے حکمرانوں نے عرب ممالک کے درمیان اختلاف کی گہری کھائی کھود دی ہے۔
قرقاش نے قطر پر دہشتگردوں کی حمایت اور شدت پسندی کے فروغ دینے کا الزام لگایا ہے کہ:قطر کی موجودہ پالیسی سے اس ملک کے عوام کا بھلا نہیں ہوگا ،بیرونی ممالک سے مدد کی فریاد اور مظلوم نمائی کرنا اور اغیار پر بھروسہ کرنا قطری قوم کے شایان شان نہیں ہے۔
قرقاش کے ان ٹوئیٹس کے ایک دن بعد امیر قطر نے فرانس کے صدر مکرون کے ساتھ نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے اپنے ہمسایہ ممالک کی پابندیوں پر برہمی کا اظہار کیا۔فرانس کے صدر نے امیر قطر کو یہ یقین دہانی کرائی کہ فرانس کے تعلقات قطر کے ساتھ بہت پُرانے ہیں اور ہم ان تعلقات کو مزید مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔
یاد رہے کہ ۵ جون ۲۰۱۷ کو عرب لیگ کے کچھ ممالک، جن میں سعودی عرب،مصر،بحرین اور متحدہ عرب امارات سرفہرست ہیں،نے قطر پر دہشتگردوں کی مالی امداد کا الزام لگاکر اقتصادی پابندیاں لگائی تھیں لیکن قطر نے ان کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے ان کی خواہشوں کے سامنے سرتسلیم خم کرنے سے انکار کردیا تھا۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 july 18