Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 194603
Published : 22/7/2018 15:58

آیت اللہ مرتضیٰ تہرانی کی زندگی پر ایک اجمالی نظر

آیت اللہ مرتضٰی تہرانی، آیت اللہ مجتبٰی تہرانی کے بڑے بھائی تھے ،آپ کی ایک ممتاز خصوصیت یہ تھی کہ آپ نے 18 سال کی عمر سے حوزہ میں اپنی تعلیم کا آغاز کیا اور آیت اللہ العظمٰی بروجردی اور امام خمینی(رح) جیسے عظیم المرتبت اساتید کے سامنے زانوئے تلمذ طئے کئے اور ایک عرصہ تک ان ہستیوں کے دروس خارج سے مستفید ہوتے رہے۔

ولایت پورٹل: إنّالله و إنّاالیه راجعون؛ کل 21 جولائی سن 2018ء بروز ہفتہ تہران کے مشہور معلم اخلاق اور امام خمینی(رح) کے ممتاز شاگرد آیت اللہ الحاج مرتضٰی تہرانی کے انتقال پر ملال کی خبر سن کر دنیا کے بہت سے علمی حلقوں اور خاص طور پر اسلامی جمہوریہ ایران کے علماء اور علم دوست لوگوں کے درمیان سوگ کی لہر دوڑ گئی۔
آیت اللہ مرتضٰی تہرانی، آیت اللہ مجتبٰی تہرانی کے بڑے بھائی تھے ،آپ کی ایک ممتاز خصوصیت یہ تھی کہ آپ نے 18 سال کی عمر سے حوزہ میں اپنی تعلیم کا آغاز کیا اور آیت اللہ العظمٰی بروجردی اور امام خمینی(رح) جیسے عظیم المرتبت اساتید کے سامنے زانوئے تلمذ طئے کئے  اور ایک عرصہ تک ان ہستیوں کے دروس خارج سے مستفید ہوتے رہے۔
آیت اللہ مرتضٰی تہرانی قم میں سکونت کے دوران امام خمینی(رح) کے بڑے فرزند آقای مصطفٰی خمینی(رض) کے صمیمی دوست تھے جو امام خمینی(رح) اخلاق و حکمت کے دروس میں ایک ساتھ شرکت کرتے تھے۔اور امام خمینی(رح) سے اتنا انس  اور لگاؤ تھا کہ جب قم کی شدید گرمی کے باعث امام خمینی(رح) کچھ دن کے لئے تہران چلے جاتے تھے تو آیت اللہ مرتضیٰ تہرانی دن رات آپ ہی کے ساتھ رہتے تاکہ زیادہ سے زیادہ اپنے علمی مسائل کو سلجھا سکیں۔
امام خمینی(رح) کے نجف ہجرت کرجانے کے بعد آیت اللہ تہرانی بھی جوار امیرالمؤمنین علی علیہ السلام میں رہنے لگے اور ایک عرصہ تک نجف اشرف کی معنوی فضا سے معطر ہوکر جب ایران لوٹے تو تہران کی مشہور مسجد میرزا موسٰی کے  امام جماعت مقرر ہوئے اور آخری دم تک وہیں رہے اور آپ ہر روز موعظہ اور درس اخلاس دیا کرتے تھے جس میں خواص و علماء کے ساتھ ساتھ شہر کے بڑے بڑے تاجر بھی شرکت کرتے تھے۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18