Thursday - 2018 Sep 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195264
Published : 6/9/2018 10:51

خطے میں شیعہ اور سنی جنگ چھیڑنے کا امریکی اور اسرائیلی منصوبہ ناکام ہوگيا ہے:سیدحسن نصراللہ

امریکہ اور اسرائیل، سعودی عرب پر مسلط حکمراں خاندان آل سعود کے ذریعہ خطے میں شیعہ اور سنی جنگ چھیڑنے کا ناپاک ارادہ رکھتے تھےجسے شیعہ اور سنیوں نے باہمی اتحاد کے ساتھ ناکام بنادیا ہے۔

ولایت پورٹل:حزب اللہ کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے عاشورائی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ خطے میں شیعہ اور سنی جنگ چھیڑنے کا امریکی اور اسرائیلی منصوبہ ناکام ہوگيا ہے،اطلاعات کے مطابق محرم الحرام کی آمد سے قبل لبنان میں ہر سال عاشورائی اجتماع منعقد ہوتا ہے اس اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سید حسن نصر اللہ نے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف امریکی، اسرائیلی اور سعودی عرب کی مشترکہ سازشوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ اور اسرائیل،  سعودی عرب پر مسلط حکمراں خاندان  آل سعود کے ذریعہ خطے میں شیعہ اور سنی جنگ چھیڑنے کا ناپاک ارادہ رکھتے تھےجسے شیعہ اور سنیوں نے باہمی اتحاد کے ساتھ ناکام بنادیا ہے اور یہی وجہ ہے کہ امریکی ، اسرائیلی اور سعودی ایجنٹ شیعہ اور سنیوں کو مشترکہ طور پر اپنی بربریت کا نشانہ بنا رہے ہیں،حزب اللہ کے سربراہ نے لبنان پر اسرائیل کی 33 روزہ مسلط کردہ جنگ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اسرائيل کو اس جنگ میں تاریخی شکست ہوئی جبکہ اسرائیل اس جنگ میں شیعہ نسل کشی پر کمر بستہ تھا لیکن اللہ تعالی نے اسے تاریخی شکست سے دوچار کردیا، انھوں نے کہا کہ امریکہ، اسرائیل اور سعودی عرب کے شوم منصوبے عراق، شام اور یمن ميں ناکام ہوگئے ہیں اور اب وہ ایران پر پابندیاں عائد کرکے ایران کے اندر کشیدگي پیدا کرنا چاہتے ہیں لیکن ان کی یہ سازش بھی ناکام ہوجائے گي۔
مہر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Sep 20