Thursday - 2018 Nov 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195278
Published : 6/9/2018 17:25

علی(ع) نفس نبی(ص)

عمرو بن عاص سے روایت ہے :جب میں غزوئہ ذات سلاسل سے واپس آیا تو میں یہ گمان کر تا تھا کہ رسول اکرم(ص) مجھ سے سب سے زیادہ محبت کرتے ہیں ،میں نے عرض کیا :یارسول اللہ(ص) آپ کے نزدیک سب سے زیادہ محبوب کون ہے ؟آپ(ص) نے چندلوگوں کاتذکرہ کیا۔میں نے عرض کیا: یارسول اللہ(ص) علی کہاں ہیں ؟تو رسول اللہ(ص)نے اپنے اصحاب سے مخاطب ہو کر فرمایا:’’اِنَّ ھٰذایَسْأَلُنِيْ عَنِ النَّفْسِ‘‘۔’’بےشک یہ میرے نفس کے بارے میں سوال کر رہے ہیں‘‘۔

ولایت پورٹل:امام علی علیہ السلام  تمام لوگوں میں سب سے زیادہ رسول اکرم(ص) کے نزدیک تھے ،ان میں سب سے زیادہ رسول(ص) سے قربت رکھتے تھے ،آپ ابو سبطین ،رسول اللہ(ص) کے شہر علم کا دروازہ تھے،آپ رسول(ص) سے سب سے زیادہ اخلاص رکھتے تھے ،احادیث کی ایک بڑی تعداد رسول اسلام(ص) سے نقل کی گئی ہے جو آپ(ع) کی محبت و مودت کی گہرائی پر دلالت کرتی ہے جیسا کہ آیہ  مباہلہ کے پس منظر  میں صاف طور پر یہ بات واضح ہے کہ بے شک امام علی(ع) نفس نبی(ص) ہیں۔ جیسا کہ سرکار ختمی مرتبت(ص) نے خود یہ اعلان فرمادیا تھا کہ علی(ع) میرے نفس ہیں چنانچہ ایک روایت میں ملتا ہے کہ: عثمان کے سوتیلے بھا ئی ولید بن عقبہ نے نبی اکرم(ص)کو خبر دی کہ بنی ولیعہ اسلام سے مرتد ہوگیا ہے تو نبی اکرم(ص) نے غضبناک ہو کر فرمایا:’’لَیَنْتَھِیَنَّ بَنُوْوَلِیْعَۃَ اَوْلَاَبْعَثَنَّ اِلَیْھِمْ رَجُلاً کَنَفْسِیْ،یَقْتُلُ مَقَاتِلَھُمْ وَیَسْبِیْ ذَرَارِیْھِمْ وَھُوَ ھٰذَا‘‘۔بنو ولیعہ میرے پاس آتے یا میں ان کی طرف اپنے جیسا ایک شخص بھیجوں جو ان کے جنگجوؤں کوقتل کرے اور ان کے اسراء کولے کر آئے اور وہ یہ ہے‘‘،اس کے بعد امام(ع) کے کندھے پر اپنا دست مبارک رکھا۔
عمرو بن عاص سے روایت ہے :جب میں غزوئہ ذات سلاسل سے واپس آیا تو میں یہ گمان کر تا تھا کہ رسول اکرم(ص) مجھ سے سب سے زیادہ محبت کرتے ہیں ،میں نے عرض کیا :یارسول اللہ(ص) آپ کے نزدیک سب سے زیادہ محبوب کون ہے ؟آپ(ص) نے چندلوگوں کاتذکرہ کیا۔میں نے عرض کیا: یارسول اللہ(ص) علی کہاں ہیں ؟تو رسول اللہ(ص)نے اپنے اصحاب سے مخاطب ہو کر فرمایا:’’اِنَّ ھٰذایَسْأَلُنِيْ  عَنِ النَّفْسِ‘‘۔’’بےشک یہ میرے نفس کے بارے میں سوال کر رہے ہیں‘‘۔

 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 15