Thursday - 2018 Nov 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195279
Published : 6/9/2018 18:6

منشور اتحاد:

اکابرین ملت، مسلمانوں کی مہر و محبت اور امن و سکون کو فتنوں کی یلغار سے محفوظ رکھیں:رہبر انقلاب

قرآن ہمیں اتحاد کی نصیحت کرتا ہے، قرآن ہمیں خبردار کررہا ہے کہ اگر تم نے اپنے اتحاد و یکجہتی کو گنوادیا تو تمہیں اپنی عزت و وقار اور تشخص و طاقت سے ہاتھ دھونا پڑے۔

ولایت پورٹل: ہم نے اتحاد بین المسلمین کے  متعلق آج تک بہت باتیں کی  ہیں۔ اب تک جو کچھ کہا ہے تھوڑا سا بھی اگر ان پر عمل ہوجاتا  تو آج مسلمانوں کی جو سرنوشت ہے اس سے کہیں بہتر ہوتی فطری طور پر کچھ اتحاد مخالف عوامل وعناصر موجود ہیں، جن میں علاقائی، مذہبی اور قبائلی نیز سیاسی اختلافات کا نام لیا جاسکتا ہے کہ ان سب سے مقابلہ کرنا ضروری ہے۔
پیغمبر اسلام(ص) کے مقدس نام پر بھروسہ کرنا جو کہ امت اسلامیہ کے اتحاد و اتفاق کا مرکز ہے۔ ان اختلافات پر غلبہ حاصل کرنے کی ضمانت فراہم کرتا ہے۔ لیکن اس سے زیادہ مشکل امر وہ تفرقہ پھیلانے والی وجوہات ہیں جو امت اسلامیہ کے سامنے پیش کی جاتی ہیں۔ انہی علاقائی، قبائلی اور مذہبی اختلافات کا سہارا لے کر اسلام دشمن، اپنی پرانی پالیسیوں کے تحت مسلمانوں میں اختلاف وجود میں لاتے ہیں۔
ان اختلافات کی پشت پر دشمن کی سازشوں اور تدبیروں کا بطور واضح مشاہدہ کیا جاسکتا ہے۔ ان سب کا علاج کرنا ضروری ہے۔ قوم کے عاقل اور خرد مند لوگ چاہے وہ کسی بھی فرقہ سے تعلق رکھتے ہوں مسلمانوں کے درمیان روز بروز بڑھتی ہوئی الفت و محبت اور بھائی چارے کی فضا کو مکدر کرنے پر مبنی اسلام دشمنوں کی تفرقہ پھیلانے کی سازشوں کو کامیاب نہ ہونے دیں۔
قرآن ہمیں اتحاد کی نصیحت کرتا ہے، قرآن ہمیں خبردار کررہا ہے کہ اگر تم نے اپنے اتحاد و یکجہتی کو گنوادیا تو تمہیں اپنی عزت و وقار اور تشخص و طاقت سے ہاتھ دھونا پڑے۔
افسوس کی بات یہ ہے کہ آج عالم اسلام میں یہ انتشار اور افرا تفری قابل مشاہدہ ہے۔ آج عالم اسلام کے خلاف بہت بڑی سازش رچی جارہی ہے۔ اگر اس دور میں اسلام کے خلاف منظم پیمانے پر رچی گئی سازشیں زیادہ سے زیادہ کاربند ہیں تو دوسری طرف امت اسلامیہ کی بیداری نے دشمنوں کو وحشت زدہ کردیا ہے۔ عالمی امپریلزم ،اسلامی ملکوں میں موجود لالچی لوگوں اور اسلامی ملکوں اور حکومتوں میں موجود مداخلت پسندوں کو امت اسلامیہ کے اتحاد سے خوف لاحق ہوگیا ہے۔
دنیا کی کل آبادی میں تقریباً ڈیڑھ ارب مسلمان پائے جاتے ہیں اور جہاں وہ سکونت پذیر ہیں وہ اس دنیا کا سب سے قیمتی اور سب سے اہم خطہ ہے۔ اس سرزمین کے خطے میں واقع ملکوں کی عظیم ثقافتی میراث، مفید انسانی توانائی اور مغربی ملکوں کے لئے بڑی منڈی ہونے اور ان ملکوں میں پائے جانے والے گرانقدر گیس اور تیل کے ذخائر کی وجہ سے استکباری طاقتوں کی لالچ کی آماجگاہ بنا ہواہے۔ وہ ان علاقوں پر اپنا مکمل قبضہ چاہتی ہیں، لیکن امت اسلامیہ کی بیداری ان کی راہ میں رخنہ اور رکاوٹ ہے۔ اتحاد اسلامی ان دشمنوں کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے اسی لئے وہ اس رکاوٹ کو برطرف کرنے کے لئے اپنی پوری کوششیں بروئے کار لاتی ہیں ۔

 نظام مملکت کے ذمہ داروں سے ملاقات کے دوران خطاب۔26 اپریل 2003ء

 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 22