Tuesday - 2018 Sep 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195294
Published : 8/9/2018 12:5

یمن کی عوام جس درد ورنج کا شکار ہیں اس کی مثال تاریخ میں نہیں ملتی:عالمی ادارہ صحت

مائیں اس قدر غریبی اور بھوک کا شکار ہوچکی ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو دودھ نہیں پلا سکتیں۔

ولایت پورٹل:مشرق وسطی کے لیے عالمی ادارہ صحت کے ریجنل ڈائریکٹر احمد المنظری نے اپنے ایک بیانیہ میں کہا ہے کہ جنگ کی وجہ سے یمن کے طبی مراکز نیست ونابود ہوگئے ہیں،بیانیہ میں مزید آیا ہے کہ مائیں اس قدر غریبی اور بھوک کا شکار ہوچکی ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو دودھ نہیں پلا سکتیں اس کے علاوہ آئے  دن وہاں وبا اور دوسری بیماریاں پھیل رہی ہیں  جن کی روک کے لیے یہاں فوری طور پر طبی سہولیات کی  اتنی ضرورت ہے جتنی تاریخ میں کبھی نہیں ہوئی ہوگی، المنظری نے مزید کہا کہ عالمی ادارہ ٔ صحت نے یہاں نوے لاکھ افراد کو طبی امداد فراہم کی ہے  لیکن جنگی حالات ہونے کے باعث بہت سارے ضرورتمند افراد تک یہ امداد نہیں پہنچ پارہی ہے، آخر میں اس ادراہ نے سعودی اتحاد سے درخواست کی ہے کہ وہ انسانی قوانین کی پاسداری کرتے ہوئے ہسپتالوں اور امدادی کارکنوں نیز دوائیں لے جانے والی گاڑیوں کو حملوں کا شکار نہ بنائیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 18