Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195348
Published : 13/9/2018 12:4

عرب حکام کی بزدلی اور ذاتی مفاد پرستی کی وجہ سے فلسطین ہمارے ہاتھوں سے نکل گیا:سید حسن نصراللہ

پوری دنیا جانتی ہے کہ امریکہ صرف اپنے مفادات کے بارے میں سوچتا ہےپھر بھی اس کو اجازت دیتے ہیں کہ جب چاہے کسی بھی ملک کے اندرونی مسائل میں مداخلت کرے۔

ولایت پورٹل:حزب اللہ کے سربرہ سید حسن نصراللہ نے کل رات جنوبی بیروت میں مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے ستر سال میں عرب حکام کی بزدلی اور ان کی دولت وثروت کے ختم ہوجانے کا ڈرا س بات باعث بنا کہ فلسطین ہمارے ہاتھوں سے نکل جائے اور امریکہ کھلے عام  خطہ میں مداخلت کرے، انھوں نے کہا کہ میں نہیں سمجھتا ہوں کہ آج سے زیادہ عالم اسلام کی سیاسی ،سماجی،فوجی ،اقتصادی اور حکومتی شخصیات صیہونیوں کی حقیقت سے وقف رہے ہوں ،آج سب جانتے ہیں کہ اسرائیل نام کا کوئی ملک نہیں تھا،پوری دنیا سے صیہونی آئے اور فلسطین پر قبضہ کر لیا اوراس ملک کے مکینوں کو یا تو قتل عام کردیا ڈرا ،دھمکا کر یا لالچ دے کر ان کے گھروں سے نکال دیا،1948 میں امریکہ ،برطانیہ اور بعض عرب ممالک کی سربراہی میں صیہونیوں نے فلسطین پر قبضہ کر لیا،صیہونیوں کی شناخت کے بارے میں کبھی بھی مشکل نہیں تھی بلکہ مشکل فداکاری ،مدد اور ان کا مقابلہ کرنے میں ہے جو عرب حکام نہیں کرتے کیونکہ انھیں  اپنی مسند اور تخت  کی فکر ہے یہ امریکہ اور برطانیہ سے ڈرتے ہیں ، اگر کوئی ان کے خلاف آواز اٹھاتا ہے تو یہ انھیں صفحہ ہستی سے مٹانے کی کوشش میں جٹ جاتے ہیں جبکہ پوری دنیا جانتی ہے کہ امریکہ صرف اپنے مفادات کے بارے میں سوچتا ہے ،جب بھی کسی بڑی شخصیت یا عام آدمی سے خصوصی طور پر بات کی جائے تو وہ یہی کہتا ہے کہ امریکہ ہماری نہیں مانتا اس کے باوجود اس کو اجازت دیتے ہیں کہ جب چاہے کسی بھی ملک کے اندرونی مسائل میں مداخلت کرے،پابندیاں لگائے۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24