Monday - 2019 January 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195499
Published : 29/9/2018 5:9

امریکہ کے ہاتھوں عام شہریوں کے قتل عام کو لے کر افغانستانی پارلیمنٹ میں ہنگامہ آرائی

افغان پارلیمنٹ نے تاکید کے ساتھ کہا ہے کہ افغانستان کے عام شہریوں اور خاص طور پر عورتوں اور بچوں کا قتل عام کرنے پر امریکہ کو جواب دینا ہو گا۔
ولایت پورٹل: افغانستان کے پارلیمانی اسپیکر عبدالرؤف ابراہیمی نے کہا ہے کہ افغانستان کے مختلف علاقوں میں امریکہ کی زیرکمان بیرونی فوجیوں کے فضائی حملوں میں عام شہریوں کا قتل عام ایک بڑا جرم ہے اور اس سلسلے میں امریکہ اور نیٹو کو جواب دینا ہو گا،حالیہ دو ہفتوں کے دوران مشرقی افغانستان کے مختلف علاقوں پر امریکہ اور نیٹو کے فضائی حملوں میں سو سے زائد افراد مارے گئے ہیں جس پر افغان عوام میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی ہے، افغان پارلیمنٹ میں اروزگان کے رکن عبیداللہ بارک زئی نے بھی کہا کہ رہائشی علاقوں پر امریکی طیاروں کی بمباری غیر قانونی ہے اور امریکہ کو اس جارحیت بند کرنا ہو گی،کابل کے رکن پارلیمنٹ اللہ گل مجاہد نے بھی کہا کہ حالیہ دو ہفتوں میں ننگرہار، میدان وردک اور کاپیسا پر امریکی حملوں میں دسیوں افراد مارے گئے ہیں۔
سحر



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2019 January 21