Wed - 2019 January 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195541
Published : 1/10/2018 18:54

امام زمانہ(عج) کی غیبت کے طولانی ہونےکی اصل وجہ

امام علیہ السلام نےاس جگہ پر ایک بھیڑ چرانے والےبچےکی طرف دیکھ کرفرمایا: اے سدید اگر ہمارے پاس ان بھیڑوں کی تعداد جتنے افراد ہوتے تو ہمارے لئے خاموشی مناسب نہیں تھی۔ سدیر نے کہا: جب میں نے انہیں گنا تو ان کی تعداد سترہ(17) تھی۔
ولایت پورٹل: امام زمانہ علیہ السلام کی غیبت کےمختلف اسباب بیان کیےگئے ہیں کہ جن میں سے ایک313 افراد کا ابھی نہ ہونا ہے۔ اسی طرح جان قربان کرنے والے ساتھیوں کی قلت ہے۔
امام کاظم علیہ السلام نے فرمایا: اگرتمہارے درمیان بدر کے اصحاب جتنی تعداد ہوتی تو ہمارے قائم قیام کرتے۔
سدیرکہتےہیں کہ میں امام صادق علیہ السلام کی خدمت میں شرفیاب ہوا اور آپ کی خدمت میں عرض کیا: اللہ کی قسم آپ کا اسی طرح بیٹھے رہنا درست نہیں ہے۔
امام علیہ السلام نے فرمایا: اے سدیرکیوں؟
میں نے عرض کیا: اصحاب اور پیروکاروں کی وجہ سے۔ اللہ کی قسم اگرامیرالمؤمنین علیہ السلام کے پاس آپ جتنے اصحاب ہوتے تو تیم اور عدی قبیلےکےافراد خلافت کا لالچ نہ کرتے۔
امام علیہ السلام نےفرمایا: ان کی تعداد کتنی ہے؟
میں نےکہا: ایک لاکھ ۔
امام علیہ السلام نےتعجب سے فرمایا: ایک لاکھ؟
میں نے کہا: جی ہاں بلکہ دو لاکھ؟
آپ نے پھرتعجب سے فرمایا: دو لاکھ؟
میں نےعرض کیا: جی ہاں بلکہ آدھی دنیا۔
امام علیہ السلام نے تھوڑی دیرخاموشی اختیارکرکے فرمایا: کیا تم میرےساتھ مدینہ کے فلاں محلہ(ینبع) تک آسکتے ہو؟ پھرہم اٹھ کرچلے۔ ۔ ۔
امام علیہ السلام نےاس جگہ پر ایک بھیڑ چرانے والےبچےکی طرف دیکھ کرفرمایا: اے سدید اگر ہمارے پاس ان بھیڑوں کی تعداد جتنے افراد ہوتے تو ہمارے لئے خاموشی مناسب نہیں تھی۔
 سدیر نے کہا: جب میں نے انہیں گنا تو ان کی تعداد سترہ(17) تھی۔

منبع: اصول کافی،ج2، ص242

 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2019 January 16