Tuesday - 2018 Nov 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196290
Published : 10/11/2018 5:54

ایران پر حملہ کا کوئی پروگرام نہیں:امریکی قومی سلامتی کے مشیر

بولٹن نے نیوا آور کے نامہ نگار کے سوال کہ اگر ایران ایٹمی معاہدہ سے خارج ہوجاتا ہے تو کیا امریکہ اس پر حملہ کرے گا،کےجواب میں کہا کہ ہمارا ایسا کو ئی پروگرام نہیں ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے جمعہ کو پیرس میں ایک  پریس کانفرانس کے دوران نامہ نگاروں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے ہمیں نہیں لگتا کہ ایران ایٹمی معاہدہ سے نکلے گا ،بولٹن نے نیوا آور کے نامہ نگار کے سوال  کہ اگر ایران ایٹمی معاہدہ سے خارج ہوجاتا ہے تو کیا امریکہ اس پر حملہ کرے گا،کےجواب میں کہا کہ ہمارا ایسا کو ئی پروگرام نہیں ہے،یاد رہے کہ رواں کے اپریل کے مہینے میں امریکہ ایران کے ساتھ ہونے والے ایٹمی  معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اس سے نکل گیا جس کے بعد اس ملک کی وزارت خزانہ داری نے اعلان کیا تھا کہ ایران پر ہٹائی جانے والی تمام پابندیاں 90دن کے اندر پھرسے لگا دی جائیں گی اسکے بعد کچھ دن پہلے امریکہ نے ایرانی تیل کی برآمدات کو صفر تک پہنچانے کا دعوی کیا تھا لیکن جلد ہی اس کو اپنے اس ارادے میں پسپائی اختیار کرنا پڑی اور 8 ممالک کو اس سے مستثنی کر دیا گیا،قابل ذکر ہے کہ اسرائیل اور بعض عرب ملکوں کے علاوہ پوری عالمی برداری امریکی صدر کی اس حرکت کی مخالفت کررہی ہے۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Nov 20