Monday - 2019 January 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196974
Published : 12/12/2018 8:6

افغانستان میں وہابیت اور سلفی افکار کی پیروی ممنوع:طالبان کا اعلان

طالبان کے فوجی کمیشن نے افغانستان کے شمال مغرب میں اعلان کیا ہے کہ عوام کے درمیان تفرقہ اندازی کی وجہ سے وہابی اور سلفی افکار کی پیروی ممنوع ہے نیز ان افکار کی تبلیغ کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی۔
ولایت پورٹل:افغان ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق طالبان کے فوجی کمیشن نے افغانستان کے شمال مغرب میں اعلان کیا ہے کہ عوام کے درمیان تفرقہ اندازی کی وجہ سے  وہابی اور سلفی افکار کی پیروی ممنوع ہے نیز ان افکار کی تبلیغ کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی،قابل ذکر ہے کہ بعض عرب ممالک افغانستان میں اسکول اور لائبریاں بنا کر اس ملک میں وہابیت اور تکفیریت کی تبلیغ میں مصروف ہیں جس کی ایک مثال  صوبہ ننگرہار میں  سعودی عرب کی طرف سے دنیا کی سب سے بڑی اسلامی یونیوسٹی   کی تعمیر ہے   جس کو لے کر افغانستان کے اہلسنت علماء بھی کافی پریشان ہیں کیوں کہ اس طرح تکفیری افکار کے حامل افراد  کم علم جوانوں کا وہابیت کی طرف مائل کر کے انتہا پسندی کی تعلیم دیتے ہیں جس کے نتیجہ میں یہ جوان خودکش بمبار کی صورت میں سماج میں ظاہر ہوتے ہیں ۔
 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2019 January 21