يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 72088
تاریخ انتشار : 2/4/2015 22:8
تعداد بازدید : 19

یمن، سعودی بمباری میں ہسپتال اور روس کا قونصل خانہ تباہ

سعودی عرب اور اسکے اتحادیوں نے صنعا میں اسپتال اور عدن میں روس کے قونصل خانہ پر شدید بمباری کی ہے-
یمن کے خلاف آل سعود اور اسکے پٹھو ملکوں نے وحشیانہ جارحیت جاری رکھتے ہوئے صنعا میں ایک اسپتال کو نشانہ بنایا جس میں متعدد افراد شہید اور زخمی ہوگئے- موصولہ اطلاعات کے مطابق بدھ کو آل سعود کے جنگی طیاروں نے صنعا سائنس و ٹکنالوجی یونیورسٹی کے اسپتال پر بمباری کی جس میں متعدد افراد شہید و زخمی ہوئے ہیں- سعودی عرب کے جارح طیاروں نے اسی طرح ایک بار پھر یمن کے شمال مغربی علاقے حجۃ میں پناہ گزینوں کے کمیپ پر حملہ کیا- سعودی عرب کے بمبار طیاروں نے یمن پر جاری حملوں میں یمن کی حساس بنیادی تنصیبات کو نشانہ بنایا ہے- آل سعود کے جارح طیاروں نے بحیرہ احمر میں میدی بندرگاہ، صوبہ صعدہ کے بعض رہائشی علاقوں اور الحدیدہ میں الیمانی ڈیری فارم اور کارخانے پر حملہ کیا- اطلاعات کے مطابق آل سعود کے پٹھو جارح اتحادی ملکوں نے حجۃ کے علاقے میں سرکاری عمارتوں کو بھی نشانہ بنایا- ادھر جنگی طیاروں کی بمباری کے ساتھ ساتھ آل سعود کی بری فوج نے بھی یمن کے سرحدی علاقوں پر میزائل اور گولے برسائے- واضح رہے بدھ کو سعودی اتحاد نے عدن میں روس کے قونصل خانے کو نشانہ بنایا جس میں روس کا قونصل خانہ مکمل طرح سے تباہ ہوگیا- روسی قونصل خانے پر کئے جانے والے حملے، اس قدر شدید تھے کہ قونصل خانے کی عمارت کا کوئی حصہ باقی نہیں بچا- ادھر روس کے ایک سفارتی ذریعے نے کہا ہے کہ روس، یمن سے اپنے سفارتکاروں اور شہریوں کو نکالنے اور قونصل خانہ بند کرنے کا جائزہ لیے رہا ہے- قابل ذکر ہے کہ یمن پر آل سعود کے حملوں میں جاں بحق ہونے والوں میں زیادہ تر تعداد، خواتین اور بچوں کی ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :