Monday - 2018 June 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72114
Published : 3/4/2015 18:49

ایران کو ایس 300 اینٹی میزائل سسٹم کی فراہمی

روس کے دفاعی ذرائع نے کہا ہے کہ اگر اقوام متحدہ نے تہران کو ہتھیاروں کی فروخت پر پابندی ہٹانے کا فیصلہ کر لیا تو ممکن ہے روس ایران کو "ایس تین سو" قسم کے اینٹی میزائل سٹٹم کی فروخت کے معاہدے پر دوبارہ عمل کرے-
روسی نیوز ایجنسی اسپوتنیک کی رپورٹ کے مطابق روس کے ایک ممتاز دفاعی ماہر نے جمعہ کے روز کہا ہے کہ اگر اقوام متحدہ نے تہران کو ہتھیاروں کی فروخت پر پابندی ہٹانے کا فیصلہ کر لیا تو ممکن ہے روس ایران کو ایس 300 اینٹی میزائل سٹٹم کی فروخت کرنے پر تیار ہو جائے- روس کے نائب وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے بھی کہا ہے کہ ایران پر عائد اقوام متحدہ کی ہتھیاروں کی پابندیوں کو ختم کئے جانے کا امکان موجودہے- ماسکو میں اسلحہ کی عالمی تجارت کے تجزیاتی مرکز کے سربراہ ایگور کوروتشنکو نے کہا ہے کہ ایران کے خلاف پابندیوں کے خاتمے میں ہتھیاروں کی فروخت پر عائد پابندی بھی شامل ہو سکتی ہے- انھوں نے کہا کہ جو مسائل ہمارے لیے کلیدی اہمیت رکھتے ہیں ان میں ایران کو "ایس 300" میزائل فراہم کرنے کا موضوع شامل ہے- روس نے دو ہزار سات میں ایران کو آٹھ سو ملین ڈالر کی مالیت کے "ایس 300 " میزائل فروخت کرنے کے معاہدے پر دستخط کیے تھے- ماسکو نے دو ہزار دس میں ایران کے ایٹمی پروگرام کے مسئلے پر ایران کو ہتھیاروں کی فروخت پر پابندی کے بارے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد کے بعد اس معاہدے پر عمل درآمد روک دیا تھا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 June 25