دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 72218
تاریخ انتشار : 4/4/2015 19:11
تعداد بازدید : 26

سعودی جارحیت: عدن میں القاعدہ کے لئے سعودی اسلحہ

عدن میں انصاراللہ کی پیشقدمی جاری رہنے کے ساتھ ہی سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے یمن کے القاعدہ گروپ کے لئے ہتھیار گرائے ہیں
روئٹرز نیوز ایجنی کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے فوجی طیاروں نے پیراشوٹ کے ذریعے ہتھیاروں اور فوجی ساز و سامان سے بھری ہوئی پیٹیاں، عدن کے مرکز التواہی میں گرائی ہیں اور یہ پیٹیاں القاعدہ کے افراد کے اختیار میں ہیں۔ یمن کے مستعفی اور مفرور صدر منصور ہادی کے حامیوں نے کہا ہے کہ یہ پیٹیاں ہلکے ہتھیاروں، مواصلاتی وسائل اور ہینڈ گرینیڈ سے بھری ہیں۔ منصور ہادی کے حامی اخبار الغد نے بھی پیراشوٹ سے لٹکی ہوئی لکڑیوں کی پیٹیوں کی تصاویر شائع کی ہیں کہ جو عدن میں گرائی گئی ہیں۔ مقامی افرادنے بھی مشاہدہ کیا ہے کہ منصور ہادی کے حامیوں نے ان پیٹیوں کو ٹرکوں اور پک اپ کے ذریعے منتقل کردیا ہے۔ واضح ر ہے کہ منصور ہادی یمن کے رہائشی علاقوں پر سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے حملے کے آغاز کے ساتھ ہی اپنی کابینہ کے افراد کے ساتھ عدن سے سعودی عرب فرار کرگیا اور اس نے سعودی عرب میں پناہ لے لی۔ در ایں اثنا سعودی اتحاد میں شامل عرب ملکوں کے فوجی کمانڈروں نے جمعے کو سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں تحریک انصاراللہ کے خلاف فوجی کاروائی کے جائزے کے لئے ایک اجلاس تشکیل دیا ہے۔ یمن کے مفرور وزیر خارجہ ریاض یاسین نے بدھ کے روز عرب اتحاد سے، تحریک انصاراللہ اور یمنی فوج کے خلاف جنگ کے لئے زمینی فوج روانہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ یہ ایسے میں ہے کہ سعودی فوجیوں نے کہا ہے کہ یمن میں زمینی حملہ قطعی نہیں ہے اور جیسی ضرورت ہوگی ویسا کیا جائے گا۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :