Saturday - 2018 Dec 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72222
Published : 4/4/2015 19:23

مشرقی یورپ میں نیٹو کے فوجی اقدامات پر روس کی وارننگ

روسی وزارت خارجہ نے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشرقی یورپ میں نیٹو کی تقویت، ایک خطرناک اقدام اور روس کے ساتھ نیٹو کے معاہدوں کی خلاف ورزی ہے- ذرائع کے مطابق روسی وزارت خارجہ کے ترجمان الیگزینڈر لوکاشویچ نے کہا ہے کہ مشرقی یورپ میں نیٹو کی فوجی تقویت، روس اور نیٹو کے مابین طے پانے والے معاہدوں کی خلاف ورزی ہے- انہوں نے کہا کہ روس اور نیٹو نے یہ معاہدہ کیا تھا کہ اس علاقے میں اپنی جنگی مشینری کو استحکام نہیں پہنچائیں گے- انہوں نے کہا کہ صبر و ضبط کے اصولوں پر دونوں طرف سے عمل ہونا چاہیے- لوکاشویچ نے کہا کہ روس، اپنے لئے نیٹو کے اقدامات کا مقابلہ کرنے کا حق محفوظ رکھتا ہے- روسی حکام نے ہمیشہ یورپ میں نیٹو کے اشتعال انگیز اقدامات پر احتجاج کیا ہے- نیٹو کے دشمنانہ اقدامات سے روس کو اس بات کا یقین ہوچلا ہے کہ مشرقی یورپ میں نیٹو کے اقدامات کا واحد مقصد، علاقے میں کشیدگی پھیلانا اور روس کی قومی سلامتی کو خطرات سے دوچار کرنا ہے، اسی وجہ سے روس نے نیٹو کا جواب دینے کے لئے فوجی مشقیں کی ہیں اور اپنے فوجیوں کی تعداد نیز فوجی ساز و سامان اور ہتھیاروں میں بھی اضافہ کیا ہے- روس اپنے ان اقدامات کو دفاعی قراردیتا ہے- ماسکو کا کہنا ہے کہ نیٹو، یورپ میں اپنی جارحانہ پالیسیوں پر گامزن ہے- روس نے اس بات پر نیٹو کو خبردار بھی کیا ہے- ادھر نیٹو نے حال ہی میں مشرقی یورپ میں سریع الحرکت فورس تشکیل دینے کے ساتھ ساتھ فوجی مشقوں کی تعداد میں بھی اضافہ کردیا ہے، اس کے علاوہ نیٹو تنظیم، مشرقی یورپ اور بحیرہ اسود میں فوجی اڈے بھی قائم کرنا چاہتی ہے- نیٹو کے ان اقدامات کے پیش نظر ماسکو، مشرقی یورپ کے تعلق سے اپنی اسٹراٹیجی پر ںظر ثانی کرنے پر مجبور ہوا ہے- ایسا معلوم ہوتا ہے کہ روس نے نیٹو کے مقابلے میں دو طرح کی پالیسیاں اپنا رکھی ہیں- ایک طرف تو وہ، یوکرین میں نیٹو کے ہر خطرے کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنی فوجی توانائیوں پر زور دیتا ہے اور دوسری طرف وہ، دنیا میں روز بروز پیدا ہونے والے چیلنچوں کا مقابلہ کرنے کے لئے نیٹو کو تعاون کی ترغیب بھی دلا رہا ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Dec 15