Tuesday - 2018 Sep 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72293
Published : 5/4/2015 22:9

یمن کا بحران: روسی منصوبے میں رخنہ اندازییمن کا بحران: روسی منصوبے میں رخنہ اندازی

یمن میں جنگ بندی کے بارے میں روس کے مسودہ قرارداد میں سعودی عرب اور اس کے بعض اتحادی روڑے اٹکا رہے ہیں- ارنا کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے سفیر نے اس سلسلے میں کہا ہے کہ ریاض، یمن کے بارے میں روس کی جانب سے مسودہ قرارداد پیش کئے جانے کی ضرورت محسوس نہیں کرتا اور عرب ممالک، اس سے قبل اس سلسلے میں ایک قرارداد پیش کرچکے ہیں کہ جس میں بحران یمن کے بارے میں تمام انسانی اور سیاسی مسائل کو مد نظر رکھا گیا ہے- عبداللہ المعلمی نے اسکائی نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے تاکید کی کہ اگر یمن کے عوامی انقلابی دھڑے اور فوجی، یمن کے دارالحکومت صنعا اور اپنے زیرکنٹرول دوسرے شہروں سے باہر نکل جائیں تو مذاکرات کی زمین ہموار ہوجائے گی لیکن انھوں نے اب تک اس سلسلے میں ایسا نہیں کیا ہے- اسکائی نیوز نے رپورٹ دی ہے کہ روس نے سلامتی کونسل میں ایک قرارداد کا مسودہ پیش کیا ہے جس میں غیرملکیوں کو باہر نکالنے کے لئے یمن پر سعودی عرب اور نہایت جھوٹے سے عرب اتحاد کے فضائی حملوں کا سلسلہ روکنے کا مطالبہ کیا گیا ہے- دوسری جانب صحافتی حلقوں نے اعلان کیا ہے کہ اقوام متحدہ میں اردن کی نمائندہ اور سلامتی کونسل کی موجودہ سربراہ دینا قعوار نے بھی کہا ہے کہ اس کونسل کے اراکین نے اعلان کیا ہے کہ یمن کے بارے میں روس کی جانب سے پیش کی جانے والی قرار داد کا جائزہ لینے کے لئے زیادہ وقت کی صرورت ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 25