Tuesday - 2018 Oct. 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72429
Published : 7/4/2015 11:51

جنوبی کوریا اور جاپان کے درمیان سرحدی کشیدگی

جنوبی کوریا نے جاپان کی جانب سے ان جزیروں پر ملکیت کا دعوی دہرانے پرتنقید کی ہے کہ جو بحیرہ جاپان میں واقع ہیں اور ان پر سئول کا کنٹرول ہے- سئول سے موصولہ رپورٹ کے مطابق جنوبی کوریا کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ جاپان کی حکومت نے ایک بار پھر اشتعال انگیز اقدام انجام دیا ہے اور اس ملک کے ہائی اسکولوں کی کتابوں میں "دوکدو جزائر" کے بارے میں کہ جو جنوبی کوریا کی سرزمین کا اٹوٹ حصہ ہیں، بے بنیاد دعوے کیے ہیں- بیان کے مطابق جاپان نے ان جزائر کے بارے میں تاریخی حقائق میں تحریف کی ہے- جاپانی ان دو پتھریلے جزیروں کو تاکشیما کا نام دیتے ہیں- اس بیان میں کہا گیا ہے کہ تاریخ کے اس تحریف شدہ نقطۂ نظر کو نوجوان نسل کے ذہنوں میں ڈالنے کے لیے، جاپان کے اقدام سے بخوبی ظاہر ہوتا ہے کہ ٹوکیو اپنی گزشتہ غلطیوں کو دہرانا چاہتا ہے۔ اس بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ اقدام یہ بھی ظاہر کرتا ہے کہ جاپان مقابل فریق کا اعتماد حاصل نہیں کرنا چاہتا اور اسے اپنے ہمسایہ ممالک کے سلسلے میں ذمہ دارانہ کردار ادا کرنے میں دلچسپی نہیں ہے- جنوبی کوریا کے نائب وزیر خارجہ "چو تائے یونگ" نے بھی پیر کے روز جاپانی سفیر کو وزارت خارجہ میں طلب کر کے جاپان کی درسی کتابوں میں مذکورہ مسئلے کو شامل کرنے پر احتجاج کیا- جاپان کی وزارت تعلیم نے بھی اعلان کیا ہے کہ حکومت کی پالیسیوں کے مطابق ہائی اسکولوں کی جغرافیہ کی تمام کتابوں میں، ان جزائر کو جاپان کے حصے کے طور پر بیان کیا جائے گا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 16