جمعه - 2019 مارس 22
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 72432
تاریخ انتشار : 7/4/2015 11:59
تعداد بازدید : 27

یرموک کیمپ کے رہائشی داعش کے لیے انسانی ڈھال

داعش کے دہشت گرد شام میں یرموک پناہ گزین کیمپ پر قبضہ کرنے کے بعد فلسطینی پناہ گزینوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کر رہے ہیں-
العالم ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق شام میں تنظیم آزادی فلسطین "پی ایل او" کے سیاسی دفتر کے سربراہ انور عبدالہادی نے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ یرموک کیمپ کی حفاظت پر مامور افراد اور داعش کے دہشت گردوں کے درمیان پیر کی صبح شدید جھڑپ ہوئی- انھوں نے کہا کہ یرموک کیمپ میں حالیہ جھڑپوں کے بعد تقریبا چار سو فلسطینی خاندان اس کیمپ کو چھوڑ کر جا چکے ہیں- یہ ایسے وقت میں ہے کہ جب ابھی تک بارہ ہزار افراد اس کیمپ میں موجود ہیں- اس فلسطینی عہدیدار نے کہا ہے کہ ان حملوں میں تقریبا اکیس افراد جاں بحق جبکہ اسی نوجوانوں کو اغوا کرلیا گیا ہے- شام میں پی ایل او کے سیاسی دفتر کے سربراہ کے مطابق داعش کے دہشت گرد اس وقت اس کیمپ کے جنوبی اور مشرقی حصے میں موجود ہیں اور عوامی فورس یرموک کے شمالی اور مغربی حصے میں مورچے سنبھالے ہوئے ہے- انور عبدالہادی نے مزید کہا کہ داعش کے دہشت گرد یرموک کیمپ کے باشندوں کو باہر نکلنے سے روک رہے ہیں اور جھڑپوں میں انھیں انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کر رہے ہیں- انھوں نے مزید کہا کہ گزشتہ دو روز کے دوران چار سو خاندان کو یرموک کیمپ سے نکال کر پرامن علاقوں میں منتقل کر دیا گیا ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :