Thursday - 2018 June 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72524
Published : 8/4/2015 13:8

رہبرانقلاب اسلامی سے ترکی کے صدر کی ملاقات

رہبر انقلاب اسلامی نے فرمایا ہے کہ یمن کے بحران کی راہ حل، حملوں کو بند کرنا اور غیر ملکی مداخلت کو روکنا ہے۔
رہبرانقلاب اسلامی آیۃ اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کا موقف یمن سمیت تمام ملکوں کے سلسلے میں بیرونی مداخلت کی مخالفت پر مبنی ہے اس لئے یمن کے بحران کی راہ حل بھی ان حملوں کو بندکرنا اور یمنی عوام کے خلاف بیرونی مداخلت کو روکنا ہے۔ رہبر انقلاب اسلامی آیۃ اللہ العظمی سید علی خامنہ نے منگل کی سہ پہر ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کے ساتھ ملاقات میں فرمایا کہ ہم نے ہمیشہ اسی بات پر تاکید کی ہے اسلامی ممالک امریکہ اور مغربی ملکوں پر اعتماد کرکے کوئی فائدہ حاصل نہیں کرسکتے اور آج بھی یہ مسلم ممالک علاقے میں مغرب کے اسلام مخالف اقدامات کا واضح طور پر مشاہدہ کر رہے ہیں۔ رہبر انقلاب اسلامی نے علاقے کے بعض ملکوں کی صورتحال اور شام و عراق میں دہشت گردوں کی وحشیانہ سرگرمیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے فرمایا کہ اگر کوئی ان واقعات کے پس پردہ خفیہ ہاتھوں کو نہ دیکھے تو اس نے خود کو دھوکے میں رکھا ہے۔ آیۃ اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے اس حقیقت کی تائید میں، علاقے کی صورتحال سے امریکہ اور صہیونی حکومت کی خوشی کا ذکر کرتے ہوئے فرمایا کہ صہیونی عناصر اور بہت سی مغربی حکومتیں اور سب سے زیادہ امریکہ ان واقعات سے خوش ہے، وہ داعش کو ختم کرنا نہیں چاہتے۔ رہبر انقلاب اسلامی نے یہ سوال پیش کرتے ہوئے کہ وہ کون ہیں جو تکفیری عناصر کی حمایت کررہے ہیں؟ فرمایا کہ اغیار یقینا یہ نہیں چاہتے کہ یہ مسائل حل ہوں اس لئے یہ مسلم ممالک کی ذمہ داری ہے کہ اپنے مسائل کے حل کے لئے خود قدم اٹھائیں اور ٹھوس فیصلہ کریں۔ لیکن افسوس کہ اجتماعی طور پر کوئی مناسب اور تعمیری فیصلہ نہیں کیا جاتا ہے۔ آیۃ اللہ العظمی خامنہ ای نے اسلامی بیداری کے ذریعے دنیا بھر میں رونما ہونے والی عظیم تبدیلیوں کو دشمنان اسلام کی تشویش کا اہم سبب قرار دیا اور اس عظیم تحریک کے خلاف دشمنوں کے منصوبوں اور سازشوں کا ذکر کرتے ہوئے فرمایا کہ آج امریکہ اور صہیونی حکومت بعض اسلامی ملکوں کے داخلی اختلافات سے خوش ہیں اور ان مشکلات کی واحد راہ حل یہی ہے کہ اسلامی ممالک باہمی تعاون کے ذریعے مناسب اور تعمیری اقدامات عمل میں لائیں۔ رہبر انقلاب اسلامی نے اس ملاقات میں عالم اسلام کی روز افزوں کامیابی و کامرانی اور شوکت و عزت کی دعا کرتے ہوئے فرمایا کہ علاقے کے مسائل کے حل کی غرض سے اسلامی جمہوریہ ایران تبادلہ خیال اور ہم فکری کے لئے آمادہ ہے۔ ترکی اعلی سطحی وفد کی رہبر انقلاب اسلامی سے ملاقات کے موقع پر اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر وزیر خارجہ اور بعض دیگر شخصات بھی موجود تھیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 June 21