Tuesday - 2018 June 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72525
Published : 8/4/2015 13:14

یرموک کیمپ دہشت گردوں کی یلغار کا مرکز بن گیا ہے

ایران کی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ دمشق کے جنوب میں واقع فلسطینی کیمپ یرموک دہشت گردوں کی یلغار کا مرکز بن گیا ہے
سحر عالمی نیٹ ورک کی رپورٹ کے مطابق ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان مرضیہ افخم نے فلسطینی پناہ گزین کیمپ یرموک کی ابتر صورتحال اور اس پر تکفیری دہشت گردوں کے وحشیانہ حملے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ افسوسناک صورتحال تین سال قبل مسلح گروہوں کے شام میں داخل ہونے کے وقت سے شروع ہوئی ہے اور اب داعش کے شامل ہونے سے مزید ابتر ہوگئی ہے۔ مرضیہ افخم نے یرموک کیمپ پر دہشت گرد گروہوں کے اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد عناصر نے مدتوں سے اس کیمپ کو جنگ و خونریزی کے میدان میں تبدیل کردیا ہے اور فلسطینیوں کے خلاف جارحیت انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان جارحانہ کاروائیوں کے اصل ذمہ دار دہشت گرد گروہ اور وہ ممالک ہیں جو شام کے تعلق سے اپنی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں پر عمل کرتے ہوئے، دہشت گردوں کی حمایت کررہے ہیں۔ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے یرموک کیمپ کے پناہ گزیں فلسطینیوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کرتے ہوئے کہا کہ وہ فلسطینی مہاجرین جنہوں نے صہیونی حکومت کے مظالم سے تنگ آکر شام میں پناہ لی تھی اور برسوں سے شام کی حکومت اور عوام ان کی میزبانی کرتے رہے ہیں آج متعدد تکفیری دہشت گردوں کی جارحیت کی بھینٹ چڑھ رہے ہیں- مرضیہ افخم نے کہا کہ ان تکفیری دہشت گرد گروہوں کو اسرائیل کی بالواسطہ یا بلا واسطہ حمایت حاصل ہے - انہوں نے کہا کہ یہ تکفیری عناصر صہیونی حکومت کے مفادات پورے کر رہے ہیں۔مرضیہ افخم نے کہا کہ امید کی جاتی ہے کہ اقوام متحدہ اس انسانی المیے کی روک تھام کے لئے اپنی ذمہ داریوں پر عمل کرے گی اور دہشت گردی کے حامی ملکوں کو دہشت گردوں کی مالی حمایت بند کرنے اور مسلح افراد کے شام میں داخل ہونے کے بارے میں ٹھوس قدم اٹھائے گی۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 June 19