Tuesday - 2018 August 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72529
Published : 8/4/2015 13:29

ایران اور ترکی کے صدور کی مشترکہ پریس کانفرنس

اسلامی جمہوریہ ایران اور ترکی کے صدر نے تہران میں سعدآباد کمپلیکس میں مذاکرات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا ہے- صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان، ان کے ہمراہ وفد اور وزراء کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ آج ہمارا بہت اچھا اور تفصیلی اجلاس ہوا اور اس کے بعد تعاون کی اعلی کونسل میں، کہ جو اس کونسل کا دوسرا اجلاس تھا، وزراء کے ساتھ شرکت کی اور دو طرفہ تعلقات اور اسی طرح علاقے کے مسائل کے بارے میں بات چیت کی- صدر مملکت نے کہا کہ اس اجلاس میں سکیورٹی مسائل اور دونوں ملکوں کی سرحدوں پر دہشت گردی کے خلاف تعاون کے بارے میں بات چیت کی گئی- ڈاکٹر حسن روحانی نے مزید کہا کہ ہماری خواہش یہ ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تعلقات کی سالانہ شرح کہ جو اس وقت چودہ ارب ڈالر ہے، بڑھا کر تیس ارب ڈالر تک پہنچا دی جائے- صدرڈاکٹر حسن روحانی نے ترکی کے صدر کے ساتھ اس مشترکہ پریس کانفرنس میں رجب طیب اردوغان اور ترک حکومت کی جانب سے ایران کے ایٹمی پروگرام مسلسل حمایت کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ترکی نے سوئٹزرلینڈ کے شہر لوزان میں ہونے والی مفاہمیت کا بھی خیرمقدم کیا ہے- انھوں نے کہا کہ ہم نے شام عراق اور فلسطین کے مسائل کے بارے میں تبادلہ خیال کے ساتھ ہی یمن بارے میں تفصیلی بات چیت کی ہے- ڈاکٹر حسن روحانی نے یہ بات بیان کرتے ہوئے کہ ایران اور ترکی کے درمیان یمن کے سلسلے میں مشترکہ نقاط پائے جاتے ہیں، کہا کہ دونوں ملکوں کے صدور کا خیال ہے کہ اس علاقے میں جنگ اور خونریزی جلد از جلد رکنی چاہیے، مکمل جنگ بندی قائم ہونی چاہیے اور حملے رکنے چاہییں- صدر مملکت نے اس پریس کانفرنس میں مزید کہا کہ یمن میں جنگ بندی ہونے کے بعد ایسے حالات بن سکتے ہیں کہ ہم انسان دوستانہ بنیادوں پر امداد بھیج سکیں- ایران اور ترکی اور دیگر ممالک ان کی مدد کریں تاکہ یمن میں ایسے حالات فراہم ہو سکیں کہ ایک وسیع البنیاد حکومت اور امن و استحکام قائم ہو- ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے اس موقع پر اپنے دورہ تہران پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے انتہائی اہم معاملات پر بات چیت کی ہے- انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والے اعلی سطح کے اقتصادی کمیشن کے اجلاس میں ثقافت، تجارت اور اقتصادی امور میں سے متعلق لا‏ئحہ عمل طے پاگیا ہے- اردوغان نے علاقے کی خطرناک صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ علاقے اور عالمی مسائل کے بارے میں دونوں ملک ایک دوسرے سے رابطے میں ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 August 14