Thursday - 2018 August 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 74179
Published : 6/5/2015 10:22

امریکہ اور بعض یورپی ممالک بدامنی پھیلا رہے ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے امریکہ اور یورپی ممالک کو اپنی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے- صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے منگل کے دن تہران میں منعقدہ کتابوں کی اٹھائیسویں بین الاقوامی نمائش کی افتتاحی تقریب میں تقریر کے دوران خطے میں یورپ کی جانب سے بدامنی پیدا کئے جانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دنیا ہمارے خطے کی مشکلات پر نہ ہنسے۔ صدر مملکت نے کہا کہ امریکہ اور یورپی ممالک خطے میں بدامنی پھیلاتے ہیں، ہمسایہ ممالک کو بلا وجہ ایک دوسرے کے خوف میں مبتلا کرتے ہیں اور اپنے ہتھیاروں کی فروخت کا راستہ ہموار کرتے ہیں اور ان ممالک کو اربوں ڈالر کے ہتھیار فروخت کرتے ہیں اور اس پر فخر بھی کرتے ہیں۔ صدر مملکت نے داعش کے خلاف تشکیل پانے والے اتحاد کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ظاہری طور پر یہ اتحاد دہشتگردی کے خلاف تشکیل پایا ہے لیکن سوال یہ ہے کہ حقیقت کیا ہے؟ انھوں نے ان ممالک کے سربراہوں کو مخاطب کر کے کہا کہ تم لوگ بے گناہ عوام پر بمباری کی حمایت کیوں کرتے ہو اور مختلف مذاہب اور اقوام کے درمیان اختلافات کیوں ڈالتے ہو؟ ڈاکٹر حسن روحانی نے تاکید کے ساتھ کہا کہ ہم شیعہ، سنی، ترک، فارس، عرب، بلوچ اور ترکمن صدیوں سے اکٹھے رہ رہے ہیں- ہمارے درمیان کبھی کوئی لڑائی اور تنازعہ نہیں ہوا- تہران، بغداد اور دمشق کے بازاروں میں مسلمانوں، یہودیوں اور عیسائیوں وغیرہ کی دوکانیں ہوتی تھیں - یہ سب صبح کے وقت ایک دوسرے کو سلام کرتے تھے اور رات کے وقت خںدہ پیشانی کے ساتھ ایک دوسرے سے جدا ہوتے تھے- تم لوگوں نے اختلافات کیوں ڈالے اور قتل و غارت کا بازار کیوں گرم کر دیا؟ صدر مملکت نے مزید کہا کہ خطے اور آج کے معاشرے کے مسائل کا حل صرف اعتدال ، اخلاق اور ادب میں مضمر ہے اور جب تک انتہا پسندی اور تشدد باقی ہے اس وقت تک دوسری طاقتیں اس سے فائدہ اٹھاتی رہیں گی اور معاشرے کے لئے مشکلات کھڑی کرتی رہیں گی-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 August 16