Tuesday - 2018 Oct. 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 74490
Published : 12/5/2015 20:20

تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ یمن میں سعودی اور امریکی جارحین کو سیاسی، فوجی، تشہیراتی اور اخلاقی لحاظ سے شکست ہوئی ہے-

تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ یمن میں سعودی اور امریکی جارحین کو سیاسی، فوجی، تشہیراتی اور اخلاقی لحاظ سے شکست ہوئی ہے- عوامی انقلابی تحریک انصار اللہ کے ترجمان عبدالسلام نے المسیرہ ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے صنعا کے بعض علاقوں پر سعودی جنگی طیاروں کے حملے کے بارے میں کہا کہ یمن پر امریکہ اور سعودی عرب کی جارحیت کوئی نیا مسئلہ نہیں ہے- انہوں نے کہا کہ جارحین نے جبل نقم کے علاقے میں ہتھیاروں کے ذخائر کی موجودگی کا دعوی کر کے اسے نشانہ بنایا اور بے گناہ شہریوں کو نقصان پہنچایا- تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے مزید کہا کہ جارحین، عوام کے گھروں، بنیادی تنصیبات اور اسپتالوں کو تباہ کر رہے ہیں لیکن وہ اپنے اس عمل سے نہ تو ملت یمن کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر سکتے ہیں نہ یمن پر اپنا تسلط قائم کر سکتے ہیں- تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے کہا کہ جارحین جنگ بندی کے دعوے سے پہلے، چند گھنٹوں کی بمباری سے عوام کو ہراساں کرنا چاہتے ہیں اور یہ ظاہر کرنا چاہتے ہیں کہ وہ اب بھی میدان جنگ میں موجود ہیں اور جب چاہے یمنی عوام کو نشانہ بنا سکتے ہیں- لیکن یمن کے عوام کو ان حملوں سے کوئی ڈر و خوف نہیں ہے اور وہ اپنی عزت و وقار کا ہرگز سودا نہیں کریں گے- عبدالسلام نے مزید کہا کہ ان دو مہینوں میں جارحین کا کوئی مقصد پورا نہیں ہوا اور آج ہم جارحین کی پسپائی کو دیکھ رہے ہیں- تحریک انصار اللہ کے ترجمان نے کہا کہ اس جارحیت کو جتنے دن گذر رہے ہیں، ملت یمن کے اتحاد میں اتنا ہی اضافہ ہو رہا ہے- انہوں نے کہا کہ جدت عمل یمنیوں کے ہاتھ میں ہے، عوام صابر ہیں اور ظالمانہ محاصرے اور جارحیت کے مقابلے میں اپنی عزت و آزادی کی خاطر طویل جنگ کے لئے تیار ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 16