يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 74832
تاریخ انتشار : 19/5/2015 10:0
تعداد بازدید : 36

ایرانی اور عراقی وزرائے دفاع کی ملاقات

ایران کے وزیر دفاع جنرل حسین دہقان نے اپنے دورہ بغداد میں اپنے عراقی ہم منصب خالد العبیدی سے ملاقات کی-
اس ملاقات میں ایران کے وزیر دفاع نے کہا ہے کہ بغداد میں ان کی موجودگی دونوں ممالک کے سمجھوتوں پر عمل اور فریقین کے درمیان تعاون کو فروغ دیئے جانے کی مظہر ہے- انھوں نے کہا کہ دونوں ممالک، مزاحمت کی طاقت بڑھانے اور مسائل و مشکلات اور سیکورٹی بحران حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں- جنرل حسین دہقان نے کہا کہ ایران کی حکومت، دفاعی اور سیکورٹی سمیت تمام شعبوں میں حکومت عراق کے ساتھ تعاون و تعلقات کو فروغ دینا چاہتی ہے- انھوں نے کہا کہ علاقے کے حالات اور بدامنی و بحران نے دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تعاون کی ضرورت کو اور زیادہ نمایاں کر دیا ہے- ایران کے وزیر دفاع نے تہران اور بغداد کے دفاعی و سیکورٹی تعاون اور دہشتگردی کے خلاف مشترکہ مہم کو علاقے میں امن و استحکام کا باعث قرار دیا- انھوں نے کہا کہ ایران پوری توانائی کے ساتھ عراقی حکومت اور قوم کے ساتھ کھڑا ہے اور اس نے دہشتگردی کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنے عراقی بھائیوں کی اپیل پر مثبت جواب دیا ہے- جنرل حسین دہقان نے امید ظاہر کی کہ ان کے دورہ بغداد میں دونوں ملکوں کے دفاعی و سیکورٹی تعلقات اور تعاون میں توسیع کے علاوہ علاقے میں بدامنی کے اہم ترین عامل کی حیثیت سے مجرم تکفیری اور صیہونی دہشتگردوں کے مراکز تباہ کرنے کے لئے موثر اقدامات، عمل میں لائے جائیں گے- اس ملاقات میں عراق کے وزیر دفاع خالد العبیدی نے بھی دہشتگردوں کے مقابلے میں ایران کی مدد و حمایت کی قدر دانی کی اور عراق کے دشمنوں کو ناکام بنانے کے لئے ایران کی جانب سے مدد و حمایت جاری رکھے جانے کی ضرورت پر زور دیا- انھوں نے امید ظاہر کی کہ عراق میں حکومت اور قوم کے درمیان اتحاد اور دہشتگردی کے خلاف مہم میں ایران کی جانب سے عراق کی مدد و حمایت کی بدولت عراق میں دہشتگرد کبھی کامیاب نہیں ہوسکیں گے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :