سه شنبه - 2019 مارس 26
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 74989
تاریخ انتشار : 21/5/2015 21:22
تعداد بازدید : 32

جواد ظریف اور اقوام متحدہ کی انڈر سیکریٹری جنرل کی ملاقات

اسلامی جمہوریۂ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے انسان دوستانہ امور کے بارے میں اقوام متحدہ کی انڈر سیکریٹری جنرل والری آموس سے بات چیت کی ہے۔
ارنا کے حوالے سے سحر نیٹ ورک کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کی انڈر سیکریٹری جنرل والری آموس نے بدھ کے روز تہران میں وزیر خارجہ محمد جواد ظریف سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں محمد جواد ظریف نے یمن کے لئے بین الاقوامی امداد رسانی کی موجودہ روش پر تنقید کی۔ رپورٹ کے مطابق جواد ظریف نے یمن کے لئے بین الاقوامی امداد رسانی کے طریقہ کار پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کی قرارداد پر عمل درآمد کو یمن کے لئے امداد رسانی میں مشکلات کا سبب نہیں بننا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ جنگ بندی کی خلاف ورزی یمن کے لئے فوری امداد رسانی کی راہ میں رکاوٹ بنی ہے۔ ایرانی وزیر خارجہ نے تاکید کے ساتھ کہا کہ انسان دوستانہ امداد پہنچانے کے لئے یمن میں ایسے علاقے بنائے جائیں جو فوجی حملوں کا نشانہ نہ بن سکیں۔ اس ملاقات میں والری آموس نے بھی اس بات کو قبول کیا کہ انسان دوستانہ امداد بغیر مشکلات کے یمن پہنچنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت یمنی عوام کے لئے انسان دوستانہ امداد رسانی کا ایک طریقہ یہ ہے کہ امداد کو یمن سے باہر کے علاقوں تک پہنچایا جائے اور پھر اس کو یمن کے اندر منتقل کیا جائے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :