Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 75688
Published : 31/5/2015 18:52

ایٹمی سمجھوتے تک رسائی کا فیصلہ جلد ہوگا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ آئندہ تین چار ہفتے کے دوران ایٹمی مذاکرات کے اختتام اور ممکنہ ایٹمی سمجھوتے تک رسائی کے سلسلے میں فیصلہ کر لیا جائے گا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے جنیوا میں ایک روزہ مذاکرات کے اختتام پر ہمارے نمائندے سے گفتگو کے دوارن کہا کہ فریقین کے درمیان تکنیکی اور سیاسی اختلافات پائے جاتے ہیں- محمد جواد ظریف نے کہا کہ مذاکرات کرنے والوں کی یہ ذمےداری ہے کہ وہ لوزان سمجھوتے میں طے پانے والے طریقہ کار کے مطابق جامع ایٹمی سمجھوتے کی نگارش کا کام مکمل کریں۔انہوں نے پانچ جمع ایک کو مشورہ دیا کہ وہ مذاکرات کے دوران توسیع پسندی اور غیر متعلقہ مسائل اٹھانے سے گریز کرے- محمد جواد ظریف نے کہا کہ آئندہ تین سے چار ہفتے کے دوران ایٹمی مذاکرات کے اختتام اور ممکنہ ایٹمی سمجھوتے تک رسائی کے سلسلے میں فیصلہ کر لیا جائے گا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے ایران کے ایٹمی سائنسدانوں سے انٹرویو لیے جانے اور ایران کی فوجی تنصیبات کے معائنے کے بارے میں کہا کہ اس سلسلے میں رہبر انقلاب اسلامی نے واضح ہدایات جاری فرمائی ہیں اور ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم ان ہی ہدایات کی روشنی سے آگے بڑھ رہی ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21