Monday - 2018 June 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 77134
Published : 17/6/2015 20:16

ایران کے خلاف پابندیوں کے نئے سسٹم پر غور

روس کے نائب وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ گروپ پانچ جمع ایک کے رکن ممالک ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی کی صورت میں ایران کے خلاف دوبارہ پابندیوں کے امکان کا جائزہ لے رہے ہیں-

موصولہ رپورٹ کے مطابق روس کے نائب وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے کہا ہے کہ گروپ پانچ جمع ایک کے رکن ممالک ایک ایسا سسٹم بنانے کی کوشش کر رہے ہیں جس کے مطابق ایران کی جانب سے ایٹمی معاہدے کی ممکنہ خلاف ورزی کی صورت میں خودبخود دوبارہ پابندیاں برقرار ہو سکیں۔ روس کے سینیئر ایٹمی مذاکرات کار نے کہا ہے کہ ماسکو کوئی ایسا اقدام کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دے گا کہ جس کی بنیاد پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی اجازت کے بغیر خود بخود ایران پر پابندیاں عائد ہو سکیں- ریابکوف نے منگل کو "رشاسگودنیا" نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ماسکو ایران کے خلاف خود بخود پابندیوں کی برقراری کو ناقابل قبول سمجھتا ہے اور ایٹمی مذاکرات کے شرکا نے روس کے اس موقف کو قبول بھی کیا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ گروپ پانچ جمع ایک، ایران کے ایٹمی پروگرام کے سلسلے میں مذاکرات میں پابندیوں کے مسئلے کے حل کے لئے تمام فریقوں کے لئے ایسے قابل قبول طریقے پر غور کر رہا ہے جس میں امریکہ اور روس کی تشویش کو مد نظر رکھا گیا ہے۔

ایم آر


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 June 25