دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 77865
تاریخ انتشار : 2/7/2015 11:36
تعداد بازدید : 12

جواد ظریف، جان کیری اور صالحی، مونیز ملاقات کا اختتام

ایران اور امریکہ کے وزرائے خارجہ نے ویانا میں چھٹی بار ملاقات کی ہے۔
اسلامی جمہوریہ ایران اور امریکہ کے وزرائے خارجہ کے درمیان ہونے والی ملاقات میں ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے سربراہ علی اکبر صالحی اور امریکہ کے وزیر توانائی ارنسٹ مونیز بھی شامل ہوئے- اس ملاقات میں یورپی یونین کے خارجہ امور کی نائب سربراہ ہیلگا اشمید بھی شریک تھیں- ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ ہم مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور اب تک مذاکرات میں پیشرفت بھی ہوتی رہی ہے- امریکی وزیر خارجہ سے ملاقات سے قبل ایران کے وزیر خارجہ نے کہا کہ پیشرفت کے کسی موقع کو ضایع نہیں ہونے دیا جائے گا- انھوں نے آئی اے ای اے کے سربراہ یوکیا امانو کے دورہ تہران کے بارے میں بھی کہا کہ ان کو ایران کا دورہ کرنے کی دعوت دی گئی ہے تاکہ وہ، ایرانی حکام کے ساتھ مختلف مسائل پر گفتگو کر سکیں- امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے بھی کہا کہ جوہری مذاکرات میں کافی پیشرفت ہوئی ہے- انھوں نے کوبرک ہوٹل میں نامہ نگاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کافی سخت مرحلہ طے کیا جا رہا ہے- یورپی یونین کی ایک ویب سائٹ کے مطابق یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موگرینی، جوہری مذاکرات میں شرکت کی غرض سے جمعرات کے روز ویانا پہنچ رہی ہیں- چین اور فرانس کے وزرائے خارجہ بھی جوہری مذاکرات میں شامل ہونے کے لئے جمعرات کے روز ویانا پہنچ رہے ہیں- واضح رہے کہ جمعرات کے روز ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف اور یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موگرینی کے درمیان بھی ویانا میں ملاقات ہو رہی ہے- ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف جمعرات کے روز ہی اپنے جرمن، چینی اور برطانوی ہم منصب سے بھی ملاقات کر نے والے ہیں۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :