دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 77916
تاریخ انتشار : 4/7/2015 12:59
تعداد بازدید : 6

فلسطینی انتظامیہ کے اقدامات پر تحریک حماس کی تنقید

فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے، فلسطینی انتظامیہ پر غرب اردن میں حماس کو نقصان پہنچانے کا الزام عائد کیا ہے-
فلسطین کے انفارمیشن سنٹر کی رپورٹ کے مطابق تحریک حماس کےترجمان حسام بدران نے جمعے کے روز، تحریک حماس کے رہنماؤں اور اراکین پر فلسطینی انتظامیہ کے سیکورٹی اہلکاروں کے حملوں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں کا مقصد صیہونی حکومت کے خلاف مزاحمت کے محاذ کو کمزور کرنا ہے- حسام بدران نے کہا کہ فلسطینی انتظامیہ کے سیکورٹی اہلکاروں کا حماس کے اراکین اور سرگرم سیاسی کارکنوں پر حملہ اس بات کو واضح کرتا ہے کہ فلسطینی انتظامیہ، صہیونی حکومت سے وابستہ اور اس کی آلہ کار ہے- تحریک حماس کے ترجمان نے فلسطینی قوم کے خلاف سیکورٹی اہلکاروں کی جارحانہ کارروائیوں کا ذمہ دار فلسطینی انتظامیہ کے سربراہ محمود عباس کو قرار دیا اور تمام گروہوں اور پارٹیوں سے اپیل کی کہ وہ ان اقدامات کے خلاف ٹھوس اور واضح موقف اختیار کریں- دوسری جانب فلسطینی اتھارٹی کے سیکورٹی اہلکاروں نے حماس کے سو سے زائد افراد کو حراست میں لے لیا ہے- فلسطینی انتظامیہ کے سیکورٹی اہلکاروں نے جمعرات کی شب اور جمعے کی صبح کو غرب اردن کے مختلف علاقوں سے تحریک حماس کے تقریبا ایک سو آٹھ اراکین کو گرفتار کر لیا ہے- ان گرفتاریوں کے بعد تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے سینئر رکن عزت رشق نے فلسطینی انتظامیہ کے سیکورٹی اہلکاروں کے ہاتھوں حماس کے اراکین کو حراست میں لئے جانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینی انتظامیہ کا یہ اقدام، صیہونی حکومت کی خوشنودی کے لئے فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر بھونکنے کے مترادف ہے- دوسری جانب اسرائیلی فوجیوں نے بھی فلسطین کی تحریک مزاحمت حماس کے چالیس اراکین کو، غرب ادن میں مزاحمتی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کے الزام میں گرفتار کر لیا-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :