Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 77925
Published : 4/7/2015 13:26

معاہدے کا معیار، ایران کی ریڈلائن کا لحاظ رکھنا ہے:عراقچی

ایران کی ایٹمی مذاکرتی ٹیم کے سینیئر رکن نے کہا ہے کہ گروپ پانچ جمع ایک کے ساتھ معاہدے کا معیار، ریڈلائن کا لحاظ رکھنا ہے- ایران کے نائب وزیر خارجہ اور سینیئر ایٹمی مذاکرات کار سید عباس عراقچی نے ویانا میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ معاہدے کے حصول کا معیار اور بنیاد، ایران کی وضع کردہ ریڈلائن کا لحاظ رکھنا ہے اور جب تک ایران کے مطالبات کا لحاظ نہیں رکھا جائے گا اس وقت تک جامع ایٹمی معاہدہ طے نہیں پائے گا- سید عباس عراقچی نے ویانا میں ایٹمی مذاکرات کے عمل کے بارے میں کہا کہ تفصیلی مذاکرات کا سلسلہ بدستور جاری ہے- ایران کی مذاکراتی ٹیم کے سینیئر رکن نے ممکنہ فوجی پہلؤوں "پی ایم ڈی" کو ایک پرانی بحث قرار دیا اور کہا کہ ایران کے ایٹمی پروگرام کے بارے میں دعوے اس وقت سامنے آئے جب وہ دباؤ اور پابندی کی بنیاد قرار پائے- سید عباس عراقچی نے ایٹمی انرجی کی عالمی ایجنسی کے سربراہ کے دورہ تہران کو مثبت اور کامیاب قرار دیا اور کہا کہ تہران ، پی ایم ڈی کے سلسلے میں پائی جانے والی بدگمانی دور کرنے کے لئے آئی اے ای اے کے ساتھ تعاون کرنے کے لئے تیار ہے- واضح رہے کہ ایٹمی انرجی کی عالمی ایجنسی کے سربراہ یوکیا امانو نے تہران سے واپس جانے کے بعد کہا ہے کہ ایران اور آئی اے ای اے کے درمیان بعض مسائل کو آگے بڑھانے کے لئے بہتر مفاہمت ہوئی ہے لیکن ابھی ایسے مسائل موجود ہیں کہ جن پر مزید کام کئے جانے کی ضرورت ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21