دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 77934
تاریخ انتشار : 4/7/2015 13:59
تعداد بازدید : 11

خلیج فارس میں ایرانی ایئربس کے مسافروں کی جائے شہادت پر پھول نچھاور کئے گئے

امریکہ کے ہاتھوں ایران کے مسافر بردار طیارے کو مار گرائے جانے کی ستائیسویں برسی کے موقع پر دوسو نوے مسافروں کی جائے شہادت پر پھول نچھاور کئے گئے-
مقدس دفاع کے آثار و اقدار کے تحفظ و اشاعت کے ادارے کے سربراہ جنرل حمید سرخیلی نے جمعے کو امریکہ کے ہاتھوں ایران کے مسافر بردار طیارے کو مار گرائے جانے کی ستائیسویں برسی کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے اسلامی جمہوریہ ایران کے مسافر بردار طیارے کو نشانہ بنا کر دنیا میں بچوں کے قتل عام کے وحشیانہ ترین جرائم کا ارتکاب کیا- امریکہ نے ایران کے جس مسافر بردار طیارے کو نشانہ بنایا تھا اس میں دو سو نوے مسافر سوار تھے جن میں چھیاسٹھ بچے اور چھیالیس غیرملکی مسافر بھی سوار تھے- جنرل حمید سرخیلی نے مزید کہا کہ امریکیوں نے ان جرائم کے بعد وینسنس بحری بیڑے کے کیپٹن کو تمغہ شجاعت سے نوازا اور اس طرح ثابت کر دیا کہ نہ صرف بےگناہ بچوں اور عورتوں کو قتل کیا جا سکتا ہے اور سزا سے بچا جا سکتا ہے بلکہ پستی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسے تمغہ شجاعت سے بھی نوازا جاسکتا ہے- جمعے کے دن گل برسائے جانے کی تقریب میں صوبہ ہرمزگان کے حکام اور اہم شخصیتوں سمیت، اس واقعے میں شہید ہونے والوں کے اہل خاندان بھی شریک تھے ۔ اس موقع پر حاضرین نے امریکہ مردہ آباد، اسرائیل مردہ آباد کے نعرے بھی لگائے- قابل ذکر ہے کہ تین جولائی انیس اٹّھاسی کو وینسنس نامی امریکی بحری بیڑے نے ایران کے مسافر بردار طیارے ایئربس چھ سو پینسٹھ کو بندر عباس سے دبئی جاتے ہوئے دو میزائلوں کا نشانہ بنا کر تباہ کردیا تھا-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :