Monday - 2018 Nov 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 77968
Published : 4/7/2015 19:37

شام: دارالحکومت دمشق میں امن کی بحالی

شام کے نائب وزیر خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ ان کے دوست ممالک کی حمایت کے نتیجے میں شام کے دارالحکومت دمشق اور اہم مغربی علاقوں میں نسبتا امن قائم ہوا ہے-

شام کے نائب وزیر خارجہ فیصل مقداد نے ہفتے کے روز روئٹرز کے ساتھ گفتگو میں گذشتہ چار برسوں کے دوران شام میں پیش آنے والے سخت ترین حالات کا ذکر کیا- انھوں نے کہا کہ شام کی طاقتور فوج، علاقے کے اتحادی ممالک منجملہ ایران، روس اور حزب اللہ کے مکمل تعاون سے، اپنے ملک کے مختلف علاقوں میں دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے کے لئے آمادہ ہے- شام کے نائب وزیر خارجہ نے سعودی عرب، ترکی اور قطر کے اتحاد کو شام کے بعض علاقوں میں دہشت گردوں کی پیش قدمی کا سبب قرار دیا اور اس اطمینان کا اظہار کیا کہ فوج اور اس کے حامی گروہوں کو درپیش ہتھیاروں کی ضرورت پوری ہونے سے نمایاں پیشقدمی ہو رہی ہے- فیصل مقداد نے ترکی کے سیاسی میدان میں تبدیلی اور اس ملک کے پارلیمانی انتخابات کا ذکر کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ترکی کے پارلیمانی انتخابات میں عوام کے ووٹ، دہشت گرد اور انتہا پسند گروہوں کے لئے انقرہ کی حمایت بند ہونے اور ان دہشت گردوں کے ترکی سے نکالے جانے کا باعث بنیں گے- شام کے نائب وزیر خارجہ نے دہشت گردی کے مقابلے کے لئے عراق کے ساتھ ہم آہنگی اور تعلقات میں بہتری لائے جانے کی ضرورت پر تاکید کی- انہوں نے کہا کہ دمشق اور بغداد کے درمیان زیادہ سے زیادہ ہم آہنگی اور اجلاسوں کا انعقاد، دہشت گردوں کے مقابلے کے لئے ضروری ہے- فیصل مقداد نے دہشت گردی کے مقابلے کے لئے عراق اور شام کی ہم آہنگ کارکردگی کی روک تھام کی غرض سے، عالمی سطح پر بعض رکاوٹوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ اور یورپی ملکوں کو اس سلسلے میں اپنی غیر منطقی کارکردگی کا جواب دہ ہونا چاہئے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Nov 19