Wed - 2018 August 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78103
Published : 6/7/2015 13:45

ایران اور پانچ جمع ایک مذاکرات، حساس مرحلے میں داخل

ایران اور پانچ جمع ایک کے وفود کے درمیان نشستوں کا سلسلہ پیچیدہ مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اور مذاکرات کار مفاہمت حاصل کرنے کی تمام تر کوششیں جاری رکھے ہوئے ہیں۔

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف اور ان کے امریکی ہم منصب کی نشست اتوار کے روز دو پہر تک جاری رہی۔ اس کے بعد ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے سربراہ علی اکبر صالحی اور امریکی وزیر توانائی ارنسٹ مونیز کے درمیان تکنیکی مسائل پر نشست کا آغاز ہوا جبکہ نائب وزرائے خارجہ اور ماہرین کی سطح پر نشستوں کا سلسلہ جاری ہے جہاں مذاکرات کے متن کے ضمیموں پر بحث و گفتگو کی جارہی ہے۔ اس وقت ان چار ضمیموں پر گفتگو، کی جارہی ہے کہ جن پر سب سے زیادہ اختلاف پایا جاتا ہے ان میں سے ایک پابندیوں اور جوابی اقدامات کا مسئلہ بھی ہے۔ اتوار کے دن فرانس، جرمنی اور برطانیہ کے وزرائے خارجہ بھی ویانا پہنچ رہے ہیں۔ یورپی یونین کی شعبہ خارجہ پالیسی کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے بھی اتوار کے دن ویانا پہنچنے کا اعلان کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق چین اور روس کے وزرائے خارجہ پیر کے روز ویانا پہنچیں گے جہاں ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے وزرائے خارجہ کی مشترکہ نشست منعقد ہو گی۔ قابل ذکر ہے کہ ایرانی مذاکرات کار ٹیم نے اس بات پر زور دیا ہے کہ تمام پابندیاں معاہدے پر دستخط کرتے ہی ختم کئے جانے کی ضرورت ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 August 15