سه شنبه - 2019 مارس 26
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 78259
تاریخ انتشار : 8/7/2015 11:43
تعداد بازدید : 9

سعودی عرب یمنی عوام پردباؤ ڈالنے میں ناکام رہا

انصار اللہ عوامی تحریک کے ایک عہدے دار نے کہا ہے کہ سعودی عرب نے انسانی المیہ کی صورت حال پیدا کر کے یمنی عوام اور عوامی تحریک انصار اللہ کو ایک دوسرے کے مد مقابل لا کھڑا کرنے کی کوشش کی ہے۔
انصار اللہ عوامی تحریک کے اعلی عہدے دار حامد البخیتی نے رشیا ٹو ڈے ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب کے حملوں میں لاکھوں یمنی عام شہریوں کی زندگی متاثر ہو رہی ہے جب کہ اب تک ہزاروں عام شہری شہید و زخمی ہو چکے ہیں۔ حامد البخیتی نے کہا کہ سعودی عرب اور اس کے اتحادی، یمن میں انسانی المیے کی صورت حال پیدا کر کے عوام، عوامی کمیٹیوں اور یمنی فوج کو ایک دوسرے کے مد مقابل لا کھڑا کرنا چاہتے تھے تاہم ان کی یہ سازش ناکام ہو گئی۔ انصار اللہ عوامی تحریک کے اعلی عہدے دار حامد البخیتی نے کہا کہ، ہم شروع سے ہی انسان دوستانہ بنیادوں پر جنگ بندی کے خواہاں تھے اور اس بات کی تصدیق انصار اللہ کی جانب سے جاری کئے جانے والے بیانات سے، کی جا سکتی ہے تاہم سعودی عرب، جنگ بندی کا صرف پروپیگنڈہ کرتا ہے اور جنگ بندی سے متعلق اس کے دعوے میں کوئی حقیقت نہیں ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان سے قبل سعودی عرب کی نام نہاد جنگ بندی، صرف نعروں کے حد تک محدود رہی اور انسانیت سے اس کا کوئی تعلق نہیں تھا۔ حامد البخیتی نے مزید کہا کہ سعودی عرب اپنا انسان دوستانہ چہرہ دکھانا چاہتا ہے تاہم جارح آل سعود حکومت نے ماہ رمضان میں بھی یمن کے دسیوں عام شہریوں کا قتل عام کرکے اپنے چہرے سے خود ہی نقاب ہٹا دیا ہے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :