Thursday - 2018 Dec 13
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78292
Published : 9/7/2015 9:10

بوسنیا کے مسلمانوں کی نسل کشی، سلامتی کونسل میں ووٹنگ بدھ تک ملتوی

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے بوسنیا کے مسلمانوں کا قتل عام تسلیم کئے جانے سے متعلق برطانیہ کی پیش کردہ قرارداد کے بارے میں ووٹنگ بدھ تک ملتوی کر دی ہے- روئٹرز کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ سربرنیٹسا میں مسلمانوں کی نسل کشی کو بیس برس پورے ہونے کے موقع پر تیار کی جانے والی قرارداد کے مسودے کے بارے میں منگل کے دن ووٹنگ کرائے- اس رپورٹ کے مطابق جب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ارکان کو اس بات کا پتہ چلا کہ روس برطانیہ کی پیش کردہ قرارداد کو ویٹو کردے گا تو انہوں نے ووٹنگ کو بدھ تک ملتوی کر دیا- اس قرارداد کے مسودے میں سربرنیٹسا میں سنہ انیس سو پچانوے میں مسلمانوں کی نسل کشی کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے- اس نسل کشی کا تسلیم کیا جانا بوسنیا میں قیام امن کی پیشگی شرط شمار ہوتی ہے- سرب فوجیوں نے جولائی سنہ انیس سو پچانوے میں سربرنیٹسا میں تقریبا آٹھ ہزار مسلمان مردوں اور نوجوان لڑکوں کا قتل عام کیا تھا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Dec 13