Wed - 2018 Sep 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78519
Published : 12/7/2015 12:3

ایرانی قوم اپنے مسائل عقل و منطق سے حل کرتی ہے

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے کہا ہے کہ ایرانی قوم نے ہمیشہ اپنے مسائل کو تاریخی و سیاسی لحاظ سے عقل و منطق کی بنیاد پر حل کیا ہے اور اپنے حق کو تسلیم کروایا ہے-

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے ہفتے کی رات افطار کی ضیافت میں اہل فن و ثقافت کے ساتھ ملاقات کی- صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے اس ملاقات میں اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ہنر و فن، یہ ہے کہ انتہائی خوبصورت اور موثر کام کو شائستہ ترین انداز میں پیش کیا جائے، کہا کہ چنانچہ حکومت نے اسی بنیاد پر عالمی طاقتوں کے ساتھ ایٹمی مذاکرات شروع کئے اور یہ کہا جاسکتا ہے کہ ایران نے ہنرمندانہ طریقے سے عالمی طاقتوں کے ساتھ مذاکرات کئے ہیں- ڈاکٹر حسن روحانی نے عالمی طاقتوں کے ساتھ گذشتہ بائیس مہینوں سے جاری ایٹمی مذاکرات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ خارجہ پالیسی میں نظر کرنے، مسکرانے، بات کرنے اور غیر ملکی اجلاسوں میں آمد و رفت کا انداز بہت زیادہ موثر واقع ہوتا ہے اور ہم نے مذاکرات میں اسی ہنر مندی کے ساتھ کام کیا- انھوں نے کہا کہ اگر مذاکرات کامیاب نہ ہوئے تو بھی دنیا اس بات کو تسلیم کرے گی کہ ایران نے منطقی مذاکرات انجام دیئے اور وہ کبھی مذاکرت کی میز سے نہیں ہٹا اور بہترین طریقے سے تمام ابہامات کا جواب دیا اور اپنے مواقف کو شفاف طور پر بیان کیا- صدر مملکت نے کہا کہ خدا کے فضل و کرم اور عوام کی دعاؤں سے اگر ہم مذاکرات میں کامیاب ہو گئے تو پوری دنیا اس بات کو جان لے گی کہ ایرانی قوم ایک ہنرمند قوم ہے جو اپنے مسائل کو عقل و منطق کے ذریعے حل کر سکتی ہے- ڈاکٹر حسن روحانی نے اس امید کا اظہار کیا کہ ان کی حکومت اور ایران کی مذاکراتی ٹیم، عوام اور دانشور طبقے کی حمایت و پشتپناہی سے، قوم کے مفادات اور بھلائی کی راہ میں قدم اٹھائے گی- صدر مملکت نے اس امر پر تاکید کرتے ہوئے کہ معاشرے میں ہنر اور فن کو جتنی زیادہ تقویت ملے گی اور اس کی اہمیت اجاگر ہو گی، انتہا پسندی اور تشدد، اتنا ہی کم ہو گا چنانچہ ہمیں چاہئے کہ ہنرمندوں کی خلاقیت کے مظاہرے کے لئے معاشرے میں حالات سازگار بنائیں تاکہ معاشرہ انتہا پسندی اور تشدد سے دوری اختیار کرے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Sep 19