Wed - 2018 july 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78608
Published : 13/7/2015 13:22

عراق: داعش نے شہریوں کو انسانی ڈھال بنا لیا

داعش دہشت گردوں نے شمالی عراق کے شہر موصل میں اپنی جارحانہ کاروائیاں جاری رکھتے ہوئے دس فوجی افسروں، دو ڈاکٹروں اور ایک وکیل کو قتل کر دیا-

الموسوعہ العراق ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق داعش دہشت گردوں نے ان دس فوجی افسروں کو گذشتہ سال جون کے مہینے میں قیدی بنایا تھا- صوبہ نینوا کے پولیس سربراہ محمد الجبوری نے کہا ہے کہ داعش عناصر نے ان دو ڈاکٹروں کو داعش دہشت گرد گروہ کے افراد کا علاج معالجہ کرنے سے انکار کرنے کے سبب، فائرنگ کا نشانہ بنایا- داعش دہشت گرد گروہ نے اسی طرح صوبہ نینوا کی گورننگ کونسل کے انتخابات کے ایک نامزد امیدوار اور وکیل ابراہیم صالح البدرانی کو چند روز قید میں رکھنے کے بعد قتل کر دیا- دوسری جانب عراق کے صوبے الانبار کے شہر فلوجہ کو آزاد کرانے کی کاروائی شروع کرنے کا وقت قریب آنے کے ساتھ ہی داعش دہشت گرد گروہ کے عناصر، عراقی فوجیوں کی پیشقدمی روکنے کے لئے، اس شہر کے لوگوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کر رہے ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 july 18