Monday - 2018 Dec 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78672
Published : 14/7/2015 11:48

افغانستان: متحدہ قومی حکومت کی سرنگونی کی سازش

افغانستان کی متحدہ قومی حکومت کے چیف ایگزیکٹو نے حکومت کی سرنگونی کی سازش سے پردہ اٹھایا ہے-

ارنا کی رپورٹ کے مطابق افغانستان کی متحدہ قومی حکومت کے چیف ایگزیکٹو عبدالله عبدالله نے پیر کے دن صوبۂ بدخشان کی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے اس صوبے کا دورہ کیا- عبداللہ عبداللہ نے کسی خاص فرد یا گروہ کا نام لئے بغیر کہا کہ افغانستان کی متحدہ قومی حکومت کی سرنگونی کی سازش تیار کرنے والوں کو یہ جان لینا چاہئے کہ متحدہ قومی حکومت کے خاتمے کی صورت میں افغانستان میں دہشت گردہ گروہ داعش یا طالبان کی حکومت قائم ہو جائے گی- عبداللہ عبداللہ نے افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی کی حکومت کی چودہ سالہ کارکردگی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کی سابق حکومت کی کارکردگی کی وجہ سے افغانستان میں طالبان کے حملوں میں شدت پیدا ہوئی- افغانستان کی متحدہ قومی حکومت کے چیف ایگزیکٹو عبدالله عبدالله نے اس موقع پر یہ دعوی بھی کیا کہ افغانستان کی سابق حکومت نے اس ملک کے عوام کو خالی خزانے، بدعنوان حکومت اور غلط اور گمراہ کن پالیسیوں کا تحفہ دیا اور یہی چیزیں افغانستان کے عوام کی آج کی مشکلات کا سبب ہیں- واضح رہے کہ اس سے قبل افغانستان کے ذرائع ابلاغ نے اخبار گارجین کے حوالے سے لکھا تھا کہ افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی موجودہ افغان حکومت کی سرنگونی کے درپے ہیں اور وہ لویہ جرگہ کے ذریعے دوبارہ اقتدار اپنے ہاتھ میں لینا چاہتے ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 17