Thursday - 2018 Sep 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 78701
Published : 14/7/2015 12:45

ایران کی پارلیمنٹ ممکنہ ایٹمی معاہدے کی نگرانی کرے گی

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ ممکنہ ایٹمی معاہدے کا جائزہ لے گی اور اس پر نگرانی بھی کرے گی۔ ایران کی پارلیمنٹ کے قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کے سربراہ علا الدین بروجردی نے پیر کی رات ایران کے قومی ٹی وی چینل ٹو پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ویانا میں مذاکرات آخری مراحل میں ہیں اور فریقین کے عزم سے بہت سی گتھیاں سلجھ گئی ہیں اور مذاکرات کو نتیجے تک پہنچانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ علا الدین بروجردی نے کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی کی جانب سے معین شدہ ریڈ لائینوں کی پابندی کرنا مذاکراتی ٹیم کا فریضہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ممکنہ ایٹمی معاہدے پر دستخط ہونے کے بعد پہلے قدم کے طور پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل ایک قرارداد پاس کرکے ایران پر عائد پابندیوں کی تمام قراردادوں کو کالعدم قرار دے گی اور اس معاہدے کی توثیق کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ محمد جواد ظریف، ویانا سے واپس آنے کے بعد پارلیمنٹ کے بند دروازوں کے پیچھے تشکیل پانے والے اجلاس میں شرکت کریں گے اور پارلیمنٹ کو تبدیلیوں کے عمل نیز حتمی معاہدے کی تفصیلات سے آگاہ کریں گے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Sep 20