Tuesday - 2018 Nov 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79175
Published : 22/7/2015 17:5

افغانستان: امن کا دارومدار قابض فوجوں کے انخلا پرہے

افغان طالبان کے ایک کمانڈر نے کہا ہے کہ جب تک یہ ملک بیرونی فوجیوں کے قبضے میں ہے اس وقت تک افغانستان میں امن ممکن نہیں ہے-

افغان طالبان کے کمانڈر ملا منصور داد اللہ نے آئی آر آئی بی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ جب تک اس ملک میں بیرونی فوجی موجود رہیں گے، اس وقت تک اشرف غنی کی حکومت کے ساتھ امن ممکن نہیں ہے- انھوں نے کہا کہ افغان عوام کو اپنے مسائل خود حل کرنا چاہئیں اور طالبان بھی تمام طبقات کی مشارکت سے ایک وسیع البنیاد حکومت کی تشکیل کے خواہاں ہیں- طالبان کے اس سینیئر کمانڈر نے کہا کہ جب تک افغانستان میں امریکہ کی سربراہی میں غیر ملکی فوجی موجود رہیں گے اس وقت تک اس ملک میں امن و استحکام برقرار نہیں ہو سکتا- انھوں نے مزید کہا کہ افغانستان سے قابضوں کے انخلا سے ہی اس ملک میں امن قائم ہو سکتا ہے- یہ ایسے عالم میں ہے کہ طالبان کے نمائندہ وفد اور افغان حکومت کے درمیان مذاکرات کا پہلا دور تقریبا دو ہفتے پہلے شروع ہوا اور فریقین نے طے کیا ہے کہ مذاکرات کے دوسرے دور میں فریقین تمام مسائل کے بارے میں اپنی تجاویز پیش کریں گے- قابل ذکر ہے کہ ان مذاکرات میں طالبان کا نمائندہ وفد میں حقانی گروپ اور طالبان کی کوئٹہ کونسل شامل ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Nov 20