Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79220
Published : 23/7/2015 19:4

اقوام متحدہ دس سال بعد ایران پر نگرانی ختم کردے گی

جوہری مذاکرات میں ایران کے سینیئر مذاکرات کار عباس عراقچی نے کہا ہے کہ قرارداد بائیس اکتیس کے مطابق سلامتی کونسل کی نگرانی دس سال بعد ختم ہو جائے گی۔ ایران کے سینیئر جوہری مذاکرات کار سید عباس عراقچی نے ملکی اور غیر ملکی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ایران اور پانچ جمع ایک رکن ممالک کے مذاکرات پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے سلامتی کونسل کی قرارداد کی مدت کو دس سال سے بڑھا کر پندرہ سال کرنے کے ممکنہ امریکی اقدام کو مسترد کرتے ہوئے، اسے ناممکن قرار دیا۔ انہوں نے وضاحت کی کہ قرارداد میں صرف دس سال تک نگرانی کا ذکر کیا گیا ہے۔ دس سال بعد ایک اور قرارداد جاری ہونے اور نگرانی کی مدت میں مزید پانچ سال کے اضافے کی خبر پر ایران کے سینیئر جوہری مذاکرات کار نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی نظر میں یہ اقدام، نہ تو قابل قبول ہے نہ ہی یہ بات معاہدے میں شامل ہے۔ ایران کے سینیئر جوہری مذاکرات کار نے اس بات پر زور دیا کہ وزارت خارجہ میں فریق مقابل کی جانب سے فرائض پورا کرنے اور معاہدے پر عملدرآمد کی نگرانی کے لئے ایک نظام قائم کیا جائے گا کیونکہ یہ مسئلہ، ایران کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ سید عباس عراقچی نے آئی اے ای اے کے بورڈ آف گورنرز سے ایران کے کیس کے باہر نکلنے کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جب معاہدے کے مسائل حل ہو جائیں گے تو واضح سی بات ہے کہ دس سال بعد ایران کا کیس بورڈ آف گورنرز سے بھی باہر نکل آئے گا۔ انہوں نے مذاکرات کے دوران رہبر انقلاب اسلامی کی بھرپور حمایت کا بھی شکریہ ادا کیا۔ سید عباس عراقچی نے اس بات پر زور دیا کہ مذاکرات کے عروج پر رہبر انقلاب اسلامی کی حمایت، ان کے اصول اور ان کی معین کردہ ریڈ لائنیں ہماری سرگرمیوں کا معیار اور ہمارے طرز عمل میں رہنما ثابت ہوئیں اور ان ہی اصولوں کے ذریعے ہمیں دوچنداں طاقت ملتی رہی۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17